طالبات کے سکول جلائے جانیکی مذمت کرتے ہیں،مولانا عبدالعزیز

طالبات کے سکول جلائے جانیکی مذمت کرتے ہیں،مولانا عبدالعزیز

مظفرآباد( وقائع نگار )امیر جماعۃالدعوۃ آزادکشمیر مولاناعبدالعزیزعلوی نے کہاہے کہ چلاس دیامر میں طالبات کے سکول جلائے جانے کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے کہاکہ اسلام اپنے بچوں کو تعلیم کے ذریعے شعور دیتا ہے ۔تعلیم سیکھنے کے لیے نبی رحمت صلعم نے قیدیوں کو رہاکیا بدلے میں صحابہ کرام رضی اللہ عنہ کو علم سے روشناس کروایا ۔سکولوں کو تباہ کرنے والوں کو تعلق اسلام سے قطعی طورپر نہیں ہوسکتا ۔یہ وطن عزیزکو بدنام کرنے کے لیے عالمی سازش ہے ۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے گزشتہ روز جاری اپنے ایک بیان میں کیا ۔انہوں نے کہاکہ سکول جلاناملک دشمنی پر مبنی ایجنڈا ہے۔اسلام اور پاکستان دشمن قوتیں وطن عزیز کو انتہاپسند معاشرے کے طور پر پیش کرنا چاہتی ہیں۔ پاکستانی قوم اسلام کا پرامن چہرہ مسخ کرنے کی سازشیں کامیاب نہیں ہونے دے گی۔ اسلام بچیوں کی تعلیم کا سب سے بڑا علمبردار ہے۔ جلائے جانے والے سکولوں کی جگہ قوم کی بیٹیوں کیلئے فی الفور نئے سکول بنائے جائیں۔ ملی مسلم لیگ پاکستانی قوم کو تعلیم کے زیور سے آراستہ کرے گی۔ ہر شہر میں اچھے تعلیمی اداروں کا قیام ہمارے منشور کا بنیادی حصہ ہے۔ مسلم حکمران قرآن کی رہنمائی میں پالیسیاں ترتیب دیں۔مسلمانوں کی سیاست، معیشت و معاشرت اسلامی اصولوں کے مطابق ہونی چاہیے۔ اسلام و پاکستان دشمن قوتیں نوجوان نسل کو تعلیم سے دور رکھنا چاہتی ہیں۔ بیرونی قوتوں کی کوشش ہے کہ پاکستانی معاشرے کو تعلیم دشمن کے طور پر دکھایا جائے۔ چلاس دیامر میں طالبات کے سکولوں پر پتھراؤ اور انہیں جلانے کے واقعات اسی مذموم منصوبہ بندی کا حصہ ہیں۔ پوری پاکستانی قوم اسلام اور پاکستان دشمنی پر مبنی ان واقعات کی شدید مذمت کرتی ہے۔ علم حاصل کرنا ہر مسلمان پر فرض ہے اور اسلام نے علم کی بہت زیادہ اہمیت و فضیلت بیان کی ہے۔طالبات کے سکولوں کو جلانے والے دشمن قوتوں کے ہاتھوں میں کھیل رہے ہیں اور کلمہ طیبہ کی بنیاد پر حاصل کئے گئے ملک میں غیر ملکی ایجنڈے کو پروان چڑھانے میں مصروف ہیں۔ انہوں نے کہاکہ قرآن ہر دور میں مسلمانوں کی رہنمائی کرتا ہے۔ اسلام کے احکامات آج بھی مسلمانوں کیلئے مشعل راہ ہیں

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر