عمران خان اور فوج میں تصادم ضرور ہوگا :معروف تجزیہ کار سہیل وڑائچ کا دعویٰ

عمران خان اور فوج میں تصادم ضرور ہوگا :معروف تجزیہ کار سہیل وڑائچ کا دعویٰ
عمران خان اور فوج میں تصادم ضرور ہوگا :معروف تجزیہ کار سہیل وڑائچ کا دعویٰ

  

لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن)معروف تجزیہ کار سہیل وڑائچ نے کہاہے کہ عمران خان اور فوج میں تصادم ہونا ہی ہونا ہے لیکن فوری طور پر نہیں ہوگا کیونکہ 6ماہ تو ہنی مون ہوتا ہے ۔

دنیا نیوز کے پروگرام ”محاذ“ میں گفتگو کرتے ہوئے سہیل وڑائچ نے کہاہے کہ عمران خان اور فوج کا تصادم ہونا ہی ہونا ہے کیونکہ فوج جونیجو کو خود ہی لائی تھی لیکن پھر ان کی اسمبلی کو توڑ کر ان کو نکالا گیا ۔ فوری طور پر فوج سے تصادم نہیں ہوگا کیونکہ 6ماہ تو ہنی مون ہوتا ہے ۔اس کے بعد چھوٹی چھوٹی باتوں پر اختلافات ہونگے ۔ ایک سال بعد عمران خان اگر ڈلیور نہ کرسکے تو ان کا سیاسی جماعتوں سے بھی تصادم ہوگا ۔ انہوں نے کہاہے کہ سیاسی حکومت فوج کی ڈھال ہوتی ہے اور فوج ہتھیار ہوتا ہے ، ہتھیار کوخالی نہیں چھوڑنا چاہئے ۔ سہیل وڑائچ کا کہنا تھا کہ یہ جو کہا جاتا ہے کہ عمران خان ڈلیور نہیں کر سکیں گے غلط ہے ۔ جب و ہ اپنی ایک ٹیم لیکر آئیں گے تو یہ کیسے ہو سکتا ہے کہ وہ ڈلیور نہ کرسکیں۔

مزید : قومی