گوشوارے سرکاری پرائیویٹ ملازمین کو ٹیکس نیٹ میں لانے کی تیاریاں 

گوشوارے سرکاری پرائیویٹ ملازمین کو ٹیکس نیٹ میں لانے کی تیاریاں 

  

ملتان (نیوز رپورٹر)ریجنل ٹیکس آفس (آر ٹی او) ملتان نے ریجن بھر کے وفاقی و صوبائی اداروں کے افسران و ملازمین سمیت پرائیویٹ اداروں میں خدمات انجام دینے والے ملازمین کو ٹیکس نیٹ میں لانے کے لئیے اداروں کے سربراہوں کو نوٹسز جاری کردیئے ہیں جس کے مطابق افسران و ملازمین کی جانب سے 9 اگست 2019ء تک فائلر بننے سمیت 2018ء  کے ٹیکس گوشوارے جمع کروانا لازمی قرار دیا گیا ہے آر ٹی او حکام نے ان سرکاری و پرائیویٹ(بقیہ نمبر53صفحہ12پر)

 اداروں سے تمام افسران و ملازمین کی لسٹیں اور جملہ کوائف طلب کرلئیے ہیں جن میں شناختی کارڈ، عہدہ اور اثاثہ جات کی مکمل تفصیل شامل ہیں آر ٹی او حکام نے جن اداروں کے سربراہان کو نوٹسز جاری کئیے ہیں ان میں ڈائریکٹر پنجاب ہاوسنگ اتھارٹی، ڈائریکٹر پاسپورٹ آفس، ڈائریکٹر اولڈ ایج بینیفٹ (او پی آئی) ڈائریکٹر انٹی کرپشن، ڈائریکٹر پنجاب ایمپلائز سوشل سکیورٹی، ڈائریکٹر پنجاب فوڈ ڈیپارٹمنٹ، پرنسپل نشتر یونیورسٹی اینڈ ہسپتال، ایم ایس کارڈیالوجی سنٹر، میڈیکل سپرنٹنڈنٹ کڈنی ہسپتال، ڈپٹی کمشنر آفس ملتان، سٹی پولیس آفیسر ملتان، ڈائریکٹر ایکسائز ٹیکسیشن ملتان، ڈائریکٹر جنرل ایم ڈی اے ملتان، ایم ایس شہباز شریف ہسپتال، میڈیکل سپرنٹنڈنٹ چلڈرن ہسپتال، ایم ایس ڈینٹل ہسپتال ملتان، ریجنل ڈائریکٹر نادرا، ڈی آئی جی جیل خانہ جات، کلکٹر آف ملٹری اکاونٹس آفیسر ملتان، ڈائریکٹر پنجاب سوشل ویلفئیر، چیف انجینئیر بلڈنگ اینڈ ہائی وے ملتان، چیف انجینئیر پبلک ہیلتھ ملتان، کلکٹر ماڈل کسٹم کلکتریٹ ملتان، ڈسٹرکٹ منیجر پی ائی اے، پاک عرب فرٹیلائزر ملتان، رمادہ ہوٹل ملتان، ریجنل منیجر زونگ نیٹ ورک ملتان، ریجنل منیجر یو فون نیٹ ورک، شامل ہیں آر ٹی او حکام نے خبردار کیا ہے کہ 9 اگست تک گوشوارے جمع نہ کروانے والے افسران و ملازمین کو انکم ٹیکس آرڈیننس 2001ء  کے سیکشن 182 کے تحت جرمانہ سمیت گوشوارے جمع کروائے جائیں گے۔

ٹیکس نیٹ

مزید :

ملتان صفحہ آخر -