7 سالہ ایمان فاطمہ کو قتل کرنیکا انکشاف‘ سنگدل باپ ملوث‘ ذرائع

7 سالہ ایمان فاطمہ کو قتل کرنیکا انکشاف‘ سنگدل باپ ملوث‘ ذرائع

  

ڈاہرانوالہ(نامہ نگار) سات سالہ ایمان فاطمہ کی موت کا ڈراپ ہو گیا‘ باپ ہی قاتل نکلا، سنگدل باپ نے گلا گھونٹ کر مارا اور لاش ہرن مائنر میں بہا دی، وجہ بچی کی گمشدگی کا ڈرامہ رچا کر روٹھی ہوئی بیوی کو منانا تھا، تفصیلات کے مطابق چند روز قبل ہرن مائنر سے ملنے والی سات سالہ ایمان فاطمہ کی موت کا ڈراپ سین ہو گیا ہے، ذرائع کے مطابق قتل ہونے والی سات سالہ ایمان فاطمہ کا والد محمد ندیم ہر وقت اپنی بیوی فہمیدہ بی بی کے کردار پر سوال اٹھاتا رہتا تھا اور(بقیہ نمبر35صفحہ12پر)

شک و شبہ کی نگاہ سے دیکھتا تھا جس کی وجہ سے فہمیدہ بی بی روٹھ کر میکے چلی گئی تھی، شوہر محمد ندیم کے کئی بار منانے کے باوجود فہمیدہ بی بی واپس آنے کو تیار نہ تھی کہ محمد ندیم کے شیطانی دماغ نے خوفناک منصوبہ بنایا اور رات گئے اپنی سب سے چھوٹی سات سالہ بیٹی ایمان فاطمہ کو سوتے ہوئے اٹھا کر نہر مراد سے نکلنے والے ہرن مائنر پر لے گیا اور گلہ دبا کر موت کے گھاٹ اتار دیا اور لاش ہرن مائنر میں پھینک دی، اس کے بعد سفاک باپ نے اپنی بیوی کو فون کر کے ایمان فاطمہ کی گمشدگی کی اطلاع دی جس پر فہمیدہ بی بی فوری گھر واپس آ گئی اور بچی کی تلاش شروع کر دی، حتکہ محمد ندیم نے اپنے ہی ہاتھوں سے قتل کی ہوئی اپنی بچی کی گمشدگی کی ایف آئی آر اپنی بیوی کی مدعیت میں تھانہ ڈاہرانوالہ میں درج کروا دی، جب بچی کی لاش نہر مراد سے نکلنے والے ہرن مائنر سے برآمد ہوئی تو ایس ایچ او تھانہ ڈاہرانوالہ ماجد اقبال نے معاملے کو سیرئیس لیا اور ہر صورت کیس کو منطقی انجام تک پہنچانے کا عہد کیا، ڈی پی او بہاولنگر اور ڈی ایس پی چشتیاں کے احکامات پر عمل کرتے ہوئے دن رات ایک کر دیا اور تفتیش کا دائرہ کار بڑھاتے ہوئے چوتھے روز ہی معصوم بچی کا قاتل باپ ڈھونڈ نکالا، تاہم ذرائع کے مطابق ابھی ملزم کو گرفتار نہیں کیا گیا، ایس ایچ او ماجد اقبال نے میڈیانمائندوں سے بات کرتے ہوئے کہا ہے کہ پولیس ابھی مصروف تفتیش ہے، جلد مزید اوراہم انکشافات اور حقائق سامنے کی امید ہے جس کے بعد ملزم کی باضابطہ گرفتار ڈالی جائے گی۔

ملوث

مزید :

ملتان صفحہ آخر -