وزیرا علیٰ بلوچستان کےخلاف تحریک عدم اعتماد نہیں آسکتی ، عبدالمالک بلوچ

  وزیرا علیٰ بلوچستان کےخلاف تحریک عدم اعتماد نہیں آسکتی ، عبدالمالک بلوچ

  

کوءٹہ(آن لائن)نیشنل پارٹی کے سربراہ ڈاکٹر مالک بلوچ نے کہا ہے کہ نیشنل پارٹی تمام جمہوری قوتوں کے ساتھ مل کر جدوجہد(بقیہ نمبر20صفحہ12پر )

کررہی ہے چیئر مین سینیٹ انتخابات میں جوکچھ ہوا سب عوام اور میڈیا کے سامنے ہے نیشنل پارٹی نے پہلے بھی بلوچستان کے مفادات پر سودا بازی نہیں کی اورآئندہ بھی نہیں کرینگے وزیرا علیٰ بلوچستان میر جام کمال کے خلاف تحریک عدم اعتماد نہیں آسکتی کیونکہ گنتی میں ان کی پوزیشن بہت مضبوط ہے، امریکہ ایران کشیدگی بلوچستان کیلئے خطرناک ثابت ہوسکتے ہیں امریکہ اور ایران کے درمیان کشیدگی بڑھ گئی تو اس کامرکز بلوچ علاقے ہونگے جس طرح کسی زمانے میں فاٹا اور شمالی وزیرستان تھے ان خیالات کا اظہارانہوں نے ایک نجی ٹی وی سے بات چیت کرتے ہوئے کیا ڈاکٹر عبدالمالک بلوچ نے کہا کہ مجھے نہیں لگتا کہ بلوچستان میں اس وقت عد م اعتماد کی تحریک پختہ ہے کیونکہ گنتی میں جام کمال خان کی پوزیشن مضبوط ہے اس وقت حالات ان کے حق میں ہیں ہم نہیں سمجھتے کہ ان کے خلاف تحریک عدم اعتماد کامیاب ہو ڈاکٹر عبدالمالک بلوچ نے امریکہ ایران کشیدگی اور ممکنہ جنگ پر کہا کہ بلوچستان پہلے سے ہی جنگ زدہ ماحول میں ہے جب سے افغانستان جنگ شروع ہوا ہے یہاں حالات خراب ہوتے ہیں اگر خدانخواستہ امریکہ اور ایران کے درمیان کشیدگی بڑھ جائے گی تو اس کا مرکز بلوچ علاقے ہونگے جو کسی زمانہ میں فاٹا تھا، ڈاکٹر عبدالمالک بلوچ نے اپنی وزارت اعلیٰ کے حوالے سے کہا کہ نواز شریف اور محمود خان اچکزئی کی مہربانی تھی جنہوں نے مجھے وزیر اعلیٰ بلوچستان نا مزد کیا کیونکہ میں امیدوار نہیں تھا بلکہ ہم نے لکھ کر دیا تھا کہ وزیر اعلیٰ بلوچستان مسلم لیگ(ن) سے ہوگا ۔

ڈاکٹرمالک بلوچ

مزید :

ملتان صفحہ آخر -