پاکستان کا کشمیریوں کے ساتھ ایمان کا رشتہ ہے،پیر اعجاز ہاشمی

  پاکستان کا کشمیریوں کے ساتھ ایمان کا رشتہ ہے،پیر اعجاز ہاشمی

  

لاہور (سٹی رپورٹر)جمعیت علمائے پاکستان کے مرکزی صدر اورنائب صدر متحدہ مجلس عمل پیر اعجاز احمد ہاشمی نے کہا ہے کہ بھارتی آئین کے تحت کشمیر کی خصوصی حیثیت کا خاتمہ بھارت کی تباہی کا پیغام لے کر آئے گا۔ کشمیری اپنے حق خودارادیت اور آزادی کے حق سے کسی صورت دست بردار ہونے کو تیار نہیں۔ کشمیر، بھارت کا حصہ نہیں،یہ پاکستان سے تعلق رکھتا ہے۔کشمیریوں کے ساتھ پاکستان کا ایمان کا رشتہ ہے۔ کشمیربرصغیر کی تقسیم کا نامکمل ایجنڈا ہے۔ جس پر 72 سال گزرنے کے باوجود بھارت کی ہٹ دھرمی کے باعث فیصلہ نہیں کیا جا سکا۔میڈیا سے گفتگو میں انہوں نے کہا کہ بزرگ کشمیری رہنما سید علی گیلانی کی امت مسلمہ سے" ہل من ناصر ینصرنا "کی اپیل حکمرانوں کے ضمیرجھنجوڑنے کے لئے کافی ہے۔ انہیں چاہیے کہ وہ کشمیری مسلمانوں کی مدد کے لیے سفارتی اور سیاسی تعلقات کے ساتھ ضرورت پڑے تو فوجی مدد بھی کرنی چاہیے۔

ان کا کہنا تھا کہ پاکستان براہ راست کشمیر میں فریق ہے اور سب سے زیادہ ہماری ذمہ داری بنتی ہے کہ کشمیریوں کی مدد کریں۔ورنہ تاریخ معاف نہیں کرے گی۔ان کا کہنا تھا کہ نہتے مجاہدین کی قربانیوں کے مقابلے میں بھارت، کشمیر کی جنگ ہار چکا ہے اور جب سے امریکہ نے کشمیر پر ثالثی کا کردار ادا کرنے کی پیشکش کی ہے اس کے بعد سے مودی سرکار دباؤ میں ہے اور وہ چاہتے ہیں کہ اس مسئلے سے نکلا جائے لیکن کسی قسم کی ریاستی دہشتگردی کا خطرہ سب سے زیادہ بھارت کو نقصان ہوگا۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -