پیرا گلائیڈنگ کے ذریعے ملک کا سافٹ امیج اُجاگر کررہی ہوں:عمارہ کرن

 پیرا گلائیڈنگ کے ذریعے ملک کا سافٹ امیج اُجاگر کررہی ہوں:عمارہ کرن

  

لاہور (سپورٹس رپورٹر)پاکستان سکائی ہاک پیرا گلائیڈنگ کلب کی چیف ایگزیکٹیو عمارہ کرن نے کہا ہے کہ کھیلوں کے فروغ سے امن کا قیام ممکن ہے جبکہ کھیل کے میدان آباد کرکے ہی ہسپتال ویران کئے جاسکتے ہیں،میرا مشن پیرا گلائیڈنگ کے کھیل کے ذریعے پاکستان کے سافٹ امیج، خوبصورت پاکستان اور پاکستانیوں کے پرُامن رویوں کی عکاسی کو یقینی بنانا ہے،پاکستان کھیلوں کے حوالے سے ایک پرُامن ملک ہے یہاں کے لوگ کھیلوں اور کھلاڑیوں سے بے پناہ محبت کرتے ہیں لہٰذا مختلف کھیلوں کی غیر ملکی ٹیموں کو بلاخوف وخطرہ پاکستان آکر مختلف ایونٹس کے مقابلوں میں حصہ لینا چاہیے۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے گزشتہ روز مقامی ہوٹل میں صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔

 ۔پاکستان سکائی ہاک پیرا گلائیڈنگ کلب کی چیف ایگزیکٹیو عمارہ کرن نے کہا ہے کہ پیرا گلائیڈنگ تھرل اور سنسنی خیزی سے بھر پور بہادر،ہمت والے زندہ دل لوگوں کا کھیل ہے،نوجوان نسل بالخصوص خواتین کی پیرا گلائیڈنگ کے کھیل میں دن بدن بڑھتی ہوئی دلچسپی کھیل کے مستقبل کیلئے نیک شگون ہے۔

 عمارہ کرن نے حکومت سے مطالبہ کیا ہے کہ آسمان کی پرواز اور ہواؤں میں اُڑنے کے شوقین لوگوں کو تفریح فراہم کرنے کیلئے ملک بھر میں پیرا گلائیڈنگ فیسٹیول منعقد کئے جائیں۔

 انہوں نے کہا کہ پاکستان قدرتی حسن کی دولت سے مالا مال ملک ہے اگر حکومت کرکٹ کے کھیل کی طرح پیرا گلائیڈنگ کے کھیل کی بھی سر پرستی کرے تو پیرا گلائیڈنگ کے شوقین غیر ملکی افراد کی بڑی تعداد پاکستان آئے گی جس سے نہ صرف پاکستان کی سیاحت کو فروغ ملے گا بلکہ عالمی سطح پر پاکستان کا سافٹ امیج بھی اُجاگر ہو گا۔انہوں نے کہا کہ پاکستان سکائی ہاک پیرا گلائیڈنگ کلب نے اپنی مدد آپ کے تحت پیرا گلائیڈنگ کی پرموشن کیلئے ملک بھر میں کئی پروگرامز منعقد کیے ہیں اور مزید کرنا چاہتے ہیں اگر ہمیں حکومتی سر پرستی مل جائے تو ہمارا کلب ملک بھر کی نوجوان نسل میں پیرا گلائیڈنگ کے کھیل کا شوق پروان چڑھائے گا۔عمارہ کرن نے مزید کہا کہ بطور خاتون پاکستان سکائی ہاک پیرا گلائیڈنگ کو چلانا خاصا مشکل کام تھا لیکن میں نے ہمت نہیں ہاری آج ملک کے ہر کونے سے لوگ ہمارے کلب میں شمولیت اختیار کررہے ہیں۔

مزید :

کھیل اور کھلاڑی -