اس ماں نے اپنی ہی 4 سالہ بیٹی دلال کو بیچ دی، بچی کے ساتھ کیا ہونے والا تھا؟ پولیس نے دل دہلا دینے والی داستان سنادی

اس ماں نے اپنی ہی 4 سالہ بیٹی دلال کو بیچ دی، بچی کے ساتھ کیا ہونے والا تھا؟ ...
اس ماں نے اپنی ہی 4 سالہ بیٹی دلال کو بیچ دی، بچی کے ساتھ کیا ہونے والا تھا؟ پولیس نے دل دہلا دینے والی داستان سنادی

  

نیو یارک (ڈیلی پاکستان آن لائن) امریکہ میں ایک خاتون نے اپنی ہی 4 سالہ بچی کو اغوا کرکے ایک دلال کے ہاتھوں فروخت کردیا، باپ کی شکایت پر جب پولیس نے بچی کی تلاش شروع کی تو وہ ایسے لوگوں کے قبضے میں تھی جو اسے بچوں سے جنسی زیادتی کے شوقین افراد کو فروخت کرنے والے تھے۔

23 سالہ کارمن لوو کی اپنے شوہر سے علیحدگی ہوچکی ہے جبکہ ان کی 4 سالہ بچی کی کسٹڈی اس کے باپ کو دی گئی ہے۔ 8 جولائی کو کارمن اپنی بیٹی کو ملنے گئی اور اس کے بعد بچی لاپتہ ہوگئی۔ بچی کے باپ نے پولیس کو شکایت کرائی تو طویل جد وجہد کے بعد بچی کو گھر سے سینکڑوں میل دور سے بازیاب کرالیا گیا۔بچی اپنے باپ کے ساتھ امریکی ریاست لوزیانا کے شہر نیو اورلینز میں مقیم تھی لیکن اسے ٹیکساس کے شہر لوئس ولے سے بازیاب کرایا گیا ہے۔ دونوں شہروں کا درمیانی فاصلہ 850 کلومیٹر ہے۔

Credit: Fayetteville Police Department

پولیس ڈیپارٹمنٹ کے میجر رابرٹ رامیئرز کا کہنا ہے کہ بچی کو ایک دلال کے حوالے کیا گیا تھا جو انسانی سمگلنگ کے گروہ سے وابستہ تھا، اس معاملے کی ایف بی آئی تحقیقات کر رہی ہے۔ جہاں سے بچی کو بازیاب کرایا گیا ہے وہاں مزید بچے بھی تھے جن کو بچوں سے جنسی زیادتی کے خواہشمند افراد کے حوالے کیا جانا تھا۔

پولیس نے بچی کی ماں کارمن لوو کو گرفتار کرکے اس کے خلاف جسم فروشی، چوری اور کسٹڈی آرڈر کی خلاف ورزی کرنے کے معاملات میں مقدمہ درج کرلیا ہے۔ پولیس کا کہنا ہے کہ 8 جولائی کو شکایت موصول ہونے کے بعد بچی کی ماں کارمن کی نگرانی شروع کی گئی اور اس کے موبائل فون کی ٹریکنگ کے ذریعے بچی کی لوکیشن کا پتہ چلایا گیا۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -