حکومت توانائی ضروریات پوری کرنے کیلئے نئے ذرائع پیدا کرے، احسن رشید

     حکومت توانائی ضروریات پوری کرنے کیلئے نئے ذرائع پیدا کرے، احسن رشید

  

 ملتان(پ ر) معروف صنعت کار اور چیف ایگزیکٹو آفیسر حفیظ گھی اینڈ جنرل ملز' Wizواش شیخ احسن رشید نے کہا ہے کہ دیامیربھاشا ڈیم اگر آج سے 25سال قبل پہلے بنتا تو اس سے بہترفائدہ اٹھایاجاسکتا تھا یہ منصوبہ آج سے 25سال قبل کا تھا لیکن اس پرکام کا آغاز اب کیا گیا ہے25سال میں تو پاکستان کی آبادی بھی بہت بڑھ گئی ہے اور ہماری توانائی کی ضروریات بھی بڑھ گئی ہیں دیامیر بھاشا ڈیم کو اس وقت کی آبادی کومدنظر رکھ (بقیہ نمبر19صفحہ6پر)

کر شرو ع کیا گیا تھا یہ ڈیم اسی وقت بنانا شروع کردیا جاتا تو اس وقت یہ فائدہ مند تھا۔یہ ڈیم دریائے سندھ پر ہی بنایاجارہا ہے دریائے سندھ پر پہلے ہی ڈیمزموجود ہیں حکومت کو چاہئے کہ وہ توانائی کی ضروریات پوری کرنے کیلئے نئے ذرائع پیدا کرے۔شیخ احسن رشید نے کہا کہ امریکا سمیت دیگر ممالک بارش کے پانی کو ذخیرہ کرلیتے ہیں اور ان کے ذریعے اپنی توانائی کی ضروریات پوری کرتے ہیں امریکا میں تو ایک ایک ریاست میں سینکڑوں جھیلیں موجود ہیں جہاں پانی کا ذخیرہ کرلیا جاتا ہے اور اسی پانی کے ذریعے توانائی کی ضروریا ت پوری کرتے ہیں۔ حکومت کو بھی چاہئے کہ پاکستان میں ہر شہر میں بار ش کا پانی ذخیرہ کرنے کا انتظام کیاجائے اور اسی پانی کو استعما ل میں لاتے ہوئے توانائی کی ضروریات پوری کی جائیں۔ جیسے آج کل کے موسم میں ملک بھر میں شدید بارشیں ہورہی ہیں اگر اس پانی کو ذخیرہ کرنے کا انتظام کیا ہوتا تو آج ہمارے شہروں کی سڑکیں بارش کے پانی میں نہ ڈوبی ہوتیں بلکہ اس پانی کو استعمال میں لاکر توانائی کی ضروریات کوپورا کیاجاسکتا تھا۔ 

احسن رشید

مزید :

ملتان صفحہ آخر -