بہاولپور:وکٹوریہ ہسپتال، آؤٹ ڈور سے  ڈاکٹرز غائب، مریض دھکے کھا کر واپس

  بہاولپور:وکٹوریہ ہسپتال، آؤٹ ڈور سے  ڈاکٹرز غائب، مریض دھکے کھا کر واپس

  

بہاولپور(ڈسٹرکٹ رپورٹر)بہاول وکٹوریہ ہسپتال کے آؤٹ (بقیہ نمبر15صفحہ6پر)

ڈورمیں کروناکی آڑمیں ڈاکٹرغائب ہوگئے ، متاثرہ مریضوں محمدعمران، محمدلطیف، محمدصابر، محمدعثمان، شمس الرحمن، زبیدہ بی بی، بلقیس بی بی، رخسانہ بیگم، نجمہ بی بی، روبینہ کوثراوردیگرکامطالبہ، متاثرہ مریضوں نے آؤٹ ڈورکے باہر احتجاج کرتے ہوئے بتایاکہ وہ ضلع بھرکے مختلف دیہاتوں سے دورائی لینے کیلئے آتے ہیں اورساڑھے بارہ بجے آؤٹ ڈورکی پرچی بندکردی گئی ہے اورایک بجے تمام ڈاکٹرز غائب ہوگئے ہیں اورکہاں سے دوائی لیں محمدلطیف نے کہاکہ اس سے قبل توشہباز شریف کادورہی بہترتھا صبح نوبجے آؤٹ ڈور کھلتاتھااورشام چاربجے تک ڈاکٹرموجود رہتے تھے محمداجمل نے بتایاکہ وہ صبح نوبجے آؤٹ ڈورپہنچاتھاگیارہ بجے پرچی شروع ہوگئی رش کی وجہ سے بارہ بجے پرچی حاصل کرسکالیکن آئی وارڈ کے ڈاکٹرساڑھے بارہ بجے ہی مریضوں کوچھوڑ کرغائب ہوگئے اب انہیں کوٹھیوں پرجاکرمریض چیک کرانے کی ترغیب دی جارہی ہے۔ سماجی رہنمامحمدایوب باجوہ نے ڈاکٹر وں کی اس ہٹ دھرمی پرافسوس کااظہارکرتے ہوئے پرنسپل قائداعظم میڈیکل کالج اورایم ایس بی وی ایچ کونااہل قراردیتے ہوئے حکومت سے مطالبہ کیاہے کہ فوری طورپرانہیں نوکری سے ہٹایاجائے اورکسی ذمہ دار افراد کوتعینات کیاجائے تاکہ بی وی ایچ کے معاملات بہترہوسکیں۔

واپس

مزید :

ملتان صفحہ آخر -