سٹاک مارکیٹ مندی کی لپیٹ میں آگئی، 100انڈیکس میں 293پوائنٹس کمی

سٹاک مارکیٹ مندی کی لپیٹ میں آگئی، 100انڈیکس میں 293پوائنٹس کمی

  

کراچی (اکنامک رپورٹر)پاکستان اسٹاک مارکیٹ کاروباری ہفتہ کے دوسرے دن ہی مندی کی لپیٹ میں آ گئی اور کے ایس ای100انڈیکس 293پوائنٹس گھٹ گیا جس کی وجہ سے انڈیکس 39800،39700اور 39600پوائنٹس کی 3بالائی حد سے نیچے گر گیااور39500پوائنٹس کی کم سطح پر بند ہوا،مندی کے سبب مارکیٹ میں سرمایہ کاروں کے63ارب روپے ڈوب گئے جبکہ67فیصد حصص کی قیمتیں بھی گر گئیں۔پاکستان اسٹاک مارکیٹ میں منگل کو کاروبا ر کا آغاز مثبت ہوا اور سرمایہ کاروں نے سیمنٹ،فوڈز،اسٹیل،بینکنگ اور پیٹرولیم سیکٹر ز میں خریداری کی جس کی وجہ سے انڈیکس ٹریڈنگ کے دوران 40300پوائنٹس کی بلند ترین سطح پر بھی عبور کر گیا مگر منافع خوری کی خاطر بعض اسٹاکٹس میں فروخت کے دباؤ کے سبب مارکیٹ تنزلی کا شکار دیکھی گئی اور انڈیکس کی الٹی گنتی شرو ع ہو گئی جس کے بعد مارکیٹ پر مندی کا رجحان غالب آگیا۔پاکستان اسٹاک مارکیٹ میں منگل کو کاروبار کے اختتام پر کے ایس ای100انڈیکس میں 293.99پوائنٹس کی کمی واقع ہوئی جس سے انڈیکس 39871.61پوائنٹس سے گھٹ کر 39577.62پوائنٹس پر آگیا اسی طرح کے ایس ای30انڈیکس162.93پوائنٹس کی کمی سے 17320.46پوائنٹس سے کم ہو کر 17157.53پوائنٹس پر بند ہوا جبکہ کے ایس ای آل شیئرز انڈیکس 27896.15پوائنٹس سے کم ہو کر 27655.81پوائنٹس ہو گیا۔مندی کے سبب مارکیٹ کے سرمائے میں 63ارب67کروڑ8لاکھ 41ہزاور947روپے کی کمی ریکارڈ کی گئی جس کے نتیجے میں سرمائے کا مجموعی حجم73کھرب90ارب 21کروڑ89لاکھ 97ہزار604روپے سے کم ہو کر 73کھرب26ارب 54کروڑ81لاکھ 55ہزار657روپے ہو گیا۔منگل کو مارکیٹ میں 26ارب روپے مالیت کے 59کروڑ39لاکھ 81ہزار حصص کے سودے ہوئے جبکہ پیر کو 25ارب روپے مالیت کے 53کروڑ93لاکھ 15ہزار حصص کے سودے ہوئے تھے۔پاکستان اسٹاک مارکیٹ میں منگل کو مجموعی طور پر422کمپنیوں کا کاروبارہوا جس میں سے 120کمپنیوں کے حصص کی قیمتوں میں اضافہ،282میں کمی اور20کمپنیوں کے حصص کی قیمتوں میں استحکام رہا۔کاروبار کے لحاظ سے ٹی آر جی پاک لمیٹڈ 4کروڑ56لاکھ،پاور سیمنٹ 4کروڑ27لاکھ،پاک الیکٹرون 4کروڑ17لاکھ،فوجی فوڈز لمیٹڈ 3کروڑ2لاکھ اور یونٹی فوڈز لمیٹڈ 2کروڑ93لاکھ حصص کے سودوں سے سرفہرست رہے۔قیمتوں میں اتار چڑھا? کے اعتبار سے سیفائر بائبر کے حصص کی قیمت میں 54.00روپے کا اضافہ ہوا جس سے اسکے حصص کی قیمت 786.00روپے ہو گئی اسی طرح 46.01روپے کے اضافے سے سیفائر ٹیکسٹائل کے حصص کی قیمت 890.00روپے پر جا پہنچی جبکہ اسلینڈ ٹیکسٹائل کے حصص کی قیمت81.03روپے کی کمی سے1012.00روپے اور نیسلے پاکستان کے حصص کی قیمت40.00روپے کی کمی سے6450.00روپے پر آ گئی۔مقامی اوپن کرنسی مارکیٹ میں منگل کو روپے کے مقابلے ڈالر ایک بار پھر168روپے کی سطح پر پہنچ گیا۔فاریکس ایسوسی ایشن آف پاکستان کی رپورٹ کے مطابق منگل کو انٹر بینک میں 10پیسے کے اضافے سے ڈالر کی قیمت خرید 167.50روپے سے بڑھ کر167.60روپے اور قیمت فروخت167.80روپے سے بڑھ کر167.90روپے ہو گئی جبکہ مقامی اوپن کرنسی مارکیٹ میں 70پیسے کے اضافے سے ڈالر کی قیمت خرید 166.80روپے سے بڑھ کر167.50روپے اور قیمت فروخت167.30روپے سے بڑھ کر168روپے کی بلند سطح پر جا پہنچی۔فاریکس ایسوسی ایشن کی رپورٹ کے مطابق گذشتہ روز یورو کی قدر میں 1.30روپے کا اضافہ ریکارڈ کیا گیا جس سے یورو کی قیمت خرید 193.20روپے سء بڑھ کر195.50روپے اور قیمت فروخت195.20روپے سے بڑھ کر196.50روپے ہو گئی اسی طرح50پیسے کے اضافے سے برطانوی پونڈ کی قیمت خرید 215روپے سے بڑھ کر215.50روپے اور قیمت فروخت217روپے سے بڑھ کر217.50روپے ہو گئی۔عالمی مارکیٹ میں گزشتہ روز سونے کی فی اونس قیمت میں استحکام رہا اور سونے کی فی اونس قیمت1975ڈالر کی سطح پر مستحکم رہی۔عالمی مارکیٹ میں سونے کے نرخوں میں استحکام کے باوجودمقامی سطح پر سونے کی قیمت400روپے اضافے سے1لاکھ23ہزار900 اور دس گرام سونے کی قیمت343روپے اضافے سے 1لاکھ6ہزار224روپے رہی جبکہ چاندی کی فی تولہ قیمت1500روپے کی سطح پر مستحکم ریکارڈ کی گئی۔

سٹاک مارکیٹ

مزید :

علاقائی -