بیروت قیامت خیز دھماکہ ، گودام میں ” ایمونیم نائٹریٹ “ موجود ہونے کا امکان لیکن دراصل یہ ہوتا کیا ہے ؟ تفصیلات سامنے آ گئیں 

بیروت قیامت خیز دھماکہ ، گودام میں ” ایمونیم نائٹریٹ “ موجود ہونے کا امکان ...
بیروت قیامت خیز دھماکہ ، گودام میں ” ایمونیم نائٹریٹ “ موجود ہونے کا امکان لیکن دراصل یہ ہوتا کیا ہے ؟ تفصیلات سامنے آ گئیں 

  

بیروت (ڈیلی پاکستان آن لائن )لبنان کے دارلحکومت بیروت میں زور دار دھماکے نے صرف ایک شہر ہی نہیں بلکہ پوری دنیا کو ہی ہلا کر رکھ دیاہے ، بتایا گیاہے کہ دھماکہ اتنا شدید تھا کہ تقریبا دس کلو میٹر دور تک آبادی میں عمارتوں کے شیشے ٹوٹ گئے اور بلڈنگز ہل کر رہ گئیں جبکہ قریبی عمارتوں تو زمین بوس ہی ہو کر رہ گئیں ۔

دھماکے کے نتیجے میں 78 افراد کے مارے جانے کی تصدیق کردی گئی ہے تاہم اموات میں اضافے کا خدشہ ظاہر کیا جارہاہے اور چار ہزار سے زائد افراد زخمی ہوئے ہیں ۔ بی بی سی کا کہناہے کہ جس گودام میں یہ دھماکہ ہوا وہاں پر ” ایمونیم نائٹریٹ “ کا ذخیرہ موجود تھا تاہم اس سلسلے میں سرکاری طور پر ابھی تصدیق نہیں کی گئی ہے۔لبنانی وزیراعظم عون مائیکل نے کہا ہے کہ یہ ناقابل قبول ہے کہ ویئر ہاوس میں 2750 ٹن امونیم نائٹریٹ موجود تھا۔

بی بی سی نے اپنی رپورٹ میں بتایا ہے کہ ایمونیم نائٹریٹ متعدد مقاصد کے لیے استعمال ہوتا ہے لیکن زیادہ تر اسے زرعی شعبے میں کھادوں میں استعمال کیا جاتا ہے اور آتشیں مواد کے طور پر بھی استعمال ہوتا ہے۔جب اسے آگ کے قریب لے جایا جائے تو یہ پھٹ جاتا ہے اور اس مرکب سے زہریلی گیسوں کا اخراج ہوتا ہے جس میں نائٹروجن آکسائڈز اور ایمونیا گیں شامل ہیں۔

چونکہ یہ آگ پکڑتا ہے اس لیے اسے محفوظ رکھنے کے لیے سخت اصول و ضوابط وضح کیے جاتے ہیں۔ اس میں یہ بھی دیکھنا ہوتا ہے کہ جہاں اسے محفوظ رکھا جائے وہاں آگ لگنے کا خطرہ نہ ہو اس کے علاوہ وہاں کوئی پائپ، اخراج کے لیے راستے نہ ہوں جہاں یہ جمع ہو سکے۔

مزید :

بین الاقوامی -