" ہم نے ایک سیل کو نشانہ بنایا اور اب ہم  ۔ ۔ ۔"بیروت دھماکوں سے کچھ گھنٹے قبل اسرائیلی وزیراعظم نیتن یاہو نے کیا دھمکی دی تھی؟ سوشل میڈیا پر ہنگامہ

" ہم نے ایک سیل کو نشانہ بنایا اور اب ہم  ۔ ۔ ۔"بیروت دھماکوں سے کچھ گھنٹے قبل ...

  

بیروت (ویب ڈیسک) لبنان کے دارلحکومت بیروت میں پراسرار دھماکے میں 75 سے زائد افرادمارے گئے ہیں اور ایسے میں اسرائیلی وزیراعظم نیتن یاہو کے آفس کی طر ف سے جاری دھمکی آمیز  بیان نے سوشل میڈیا  پر ہنگامہ برپاکردیا۔

دھماکوں سے  دو گھنٹے قبل " پرائم منسٹر آف اسرائیل" کے آفیشل ٹوئٹر ہینڈل سے وزیراعظم نیتن یاہو کی طرف سے جاری کردہ بیان میں کہا گیا کہ " ہم نے ایک سیل کو نشانہ بنایا گیا اور اب انہیں بھیجنے والوں کا نشانہ بنائیں گے ، ہم وہ تمام کریں گے جو ہمارے دفاع کے لیے ضروری ہے ، میں حزب اللہ سمیت ان تمام کو تجویز دیتا ہوں کہ اس پر غور کریں"۔

ان کی طرف سے مزید لکھاگیا کہ " یہ فالتو الفاظ نہیں، یہ ریاست اسرائیل کا وزن رکھتے ہیں، اسے سنجیدگی سے لیاجائے گا"۔

صرف یہی نہیں بلکہ دھماکہ ہونے کے چند گھنٹے بعد اسی ٹوئٹر اکائونٹ پر اسرائیل نے پینترا بدلا اور امدادی سرگرمیوں میں معاونت کی پیشکش بھی کرڈالی ۔ لکھا گیا کہ"وزیراعظم نیتن یاہو نے این ایس سی کے سربراہ بین شبت کو ہدایت کی ہے کہ وہ  اقوام متحدہ کے مڈل ایسٹ پیس پراسیس کے کوارڈینیٹر سے رابطہ کریں اور وضاحت کریں کہ اسرائیل مزید کیسے لبنان کی معاونت کرسکتا ہے ۔

مزید :

اہم خبریں -بین الاقوامی -