ہائیکورٹ نے پنجاب میں پٹواریوں کی بھرتی کے خلاف درخواستیں خارج کر دیں 

 ہائیکورٹ نے پنجاب میں پٹواریوں کی بھرتی کے خلاف درخواستیں خارج کر دیں 

  

لاہور(نامہ نگارخصوصی)لاہور ہائی کورٹ نے پنجاب میں پٹواریوں کی بھرتی کے خلاف دائر درخواستیں خارج کر دیں،جسٹس شمس محمود مرزا نے پنجاب میں پٹواریوں کی بھرتیوں کے خلاف درخواستوں پر دلائل مکمل ہونے پر 28 جولائی کو اپنافیصلہ محفوظ کیا تھا، درخواست گزاروں کے وکلاء کی طرف سے موقف اختیار کیا گیاتھا کہ حکومت نے 2009 ء میں پٹواریوں کی بھرتی رولز میں تبدیلی کی،پٹواریوں کی بھرتی کے لیے پٹوار کورس کی شرط کو ختم کر کے کمپیوٹر کورس اور سپیڈ ضروری قرار دی گئی ہے،دو ہزار قبل پٹوار کورس میں ادویات، شریعت اور کیلی گرافی پڑھائی جاتی تھی،پنجاب میں پٹواریوں کی تمام بھرتیاں رولز کے خلاف کی جا رہی ہیں،عدالت نئی بھرتیوں کو روک کر پرانے رولز کے مطابق بھرتیاں کرنے کا حکم دے،اسسٹنٹ ایڈووکیٹ جنرل نے عدالت کو بتایا کہ 2009 رولز میں تبدیلی کو چیلنج نہیں کیا گیا،13 سال بعد 2021 ء کی نئی بھرتیوں کو چیلنج نہیں کیا جا سکتا،اسی طرح کی درخواستوں پر ہائی کورٹ ملتان بنچ اپنا فیصلہ سنا چکا ہے۔

پٹواریوں کی بھرتی

مزید :

صفحہ آخر -