چینی کی قیمت کا حکومتی نوٹیفکیشن معطل کرنے کیلئے ملزمالکان کی استدعا مسترد 

 چینی کی قیمت کا حکومتی نوٹیفکیشن معطل کرنے کیلئے ملزمالکان کی استدعا مسترد 

  

لاہور(نامہ نگارخصوصی)لاہور ہائی کورٹ کے مسٹر جسٹس شمس محمود مرزانے چینی کی قیمت مقرر کرنے کا حکومتی نوٹیفکیشن معطل کرنے کی ملزمالکان کی استدعا مسترد کر دی تاہم چینی کے سٹاک کے برابر ضمانتی مچلکے جمع کروانے کی شرط پر حکومت کو شوگر ملز کے خلاف تادیبی کارروائی سے روک دیا، عدالت نے اپنے عبوری تحریری حکم میں عدالت عالیہ کے دفترکو ہدایت کی ہے کہ اس نوعیت کی تمام درخواستوں کو یکجاکرکے سماعت کے لئے پیش کیا جائے، عدالت نے کین کمشنر کو شوگر ملز مالکان کی چینی کی سپلائی کا ریکارڈ تیارکرنے کی ہدایت کرتے ہوئے پنجاب حکومت اوردیگر مدعاعلیہان کو تحریری جواب داخل کرنے کاحکم دیاہے،عدالت عالیہ نے اپنے سابق حکم میں تمام ملزمالکان کو سن کر متفقہ ریٹ مختص کرنے کا حکم دیا،عدالتی حکم کے باجود ہمیں سنا ہی نہیں گیا،حکومت کی جانب سے چینی کی نئی قمیت 89.50 روپے مقرر کی گئی،اس قیمت پر چینی فروخت کرنا ممکن نہیں،عدالت سے استدعا ہے کہ کہ چینی کی قیمت مقرر کرنے کا نوٹیفکیشن کالعدم قرار دیا جائے،عدالت نے ایک روزقبل مذکورہ بالادرخواستوں پر اپنا فیصلہ محفوظ کرلیا تھا جو عدالت کی جانب سے گزشتہ روز سنا دیاگیا۔

 استدعا مسترد 

مزید :

صفحہ آخر -