پنجاب اسمبلی نے استحقاق بل دوبارہ منظورکر لیا تو ان کی مرضی،گورنر پنجاب 

 پنجاب اسمبلی نے استحقاق بل دوبارہ منظورکر لیا تو ان کی مرضی،گورنر پنجاب 

  

 لاہور(نمائندہ خصوصی)گور نر پنجاب چوہدری سرور نے کہا ہے پنجاب اسمبلی استحقاق بل پر میرے اعتراضات کسی کو خوش کرنے کیلئے تھے نہ کسی کی ڈکٹیشن لیتاہوں۔عدلیہ کی پاور صر ف ججوں کے پاس ہونی چاہئے کسی اور کے پاس نہیں۔سپیکر پنجاب اسمبلی چوہدری پرویز الہٰی ہما ر ے اتحادی ہیں ان کیساتھ ابھی مزید 2 سال چلنا ہے۔اراکین پنجاب اسمبلی نے د و بارہ استحقا ق بل منظور کر لیا ہے تویہ ان کی مر ضی۔ وہ بد ھ کے روزمقامی ہوٹل لاہور میں پاکستان میں پہلی ڈیجیٹل ہیلتھ کانفر نس سے خطا ب اور میڈیا سے گفتگو کر رہے تھے۔گور نر پنجاب چوہدری سرور نے میڈیا کے سوالوں کے جوابات دیتے ہوئے کہا ہم نے امر یکہ یا کسی اور ملک کے نہیں صرف پاکستان کے مفاد میں فیصلے کرنے ہیں۔ افغان امن عمل میں پاکستان پہلے دن سے اپنا تاریخی کردار ادا کر رہا ہے اور یہ موقف رہاہے جنگیں مسائل کا حل نہیں ہوتیں۔ پوری دنیا نے دیکھا افغانستان میں امریکہ اٹھارہ سال رہنے کے باوجود ناکام رہا۔چوہدری سرور نے کہا پنجاب اسمبلی نے استحقاق بل دوبارہ منظور کرلیاہے تو اس پر اعتراض نہیں کر سکتا، میں نے جو بھی اعتراضات لگائے وہ آئین وقانون کے مطابق ہی ہیں۔ سپیکر پنجاب اسمبلی چوہدری پرویز الہٰی کے جو بھی تحفظات ہونگے ان کودور کیا جائے گا۔ ڈیجیٹل ہیلتھ کا مستقبل بڑا شاندار ہے، لاہور میں ہونیوالی پاکستان کی ڈیجیٹل ہیلتھ کانفر نس خوش آئند ہے۔ اس کانفر نس کے ذریعے ہمیں ہیلتھ پالیسی اور اصلاحات کرنے میں بھی مدد ملے گی۔کورونا کے دوران بھی ہم نے ٹیلی میڈیسن ہیلپ لائن کے ذریعے لاکھوں افراد کو گھر بیٹھے صحت کی سہولتیں فراہم کی ہیں۔ موجودہ حکومت عوام کو صحت کی سہولتوں کی فراہمی کیلئے عملی اقدامات کر رہی ہے۔  

گورنر پنجاب

مزید :

صفحہ آخر -