67سالہ بزرگ کی 19سالہ لڑکی سے لو میرج ، تحفظ کیلئے عدالت سے سکیورٹی مانگ لی 

67سالہ بزرگ کی 19سالہ لڑکی سے لو میرج ، تحفظ کیلئے عدالت سے سکیورٹی مانگ لی 
67سالہ بزرگ کی 19سالہ لڑکی سے لو میرج ، تحفظ کیلئے عدالت سے سکیورٹی مانگ لی 

  

ہریانہ ( ڈیلی پاکستان آن لائن ) بھارت کے ضلع ہریانہ کے ہتھین علاقے میں 67سالہ بزرگ نے 19سالہ لڑکی سے شادی کر لی جبکہ لڑکی کے رشتے داروں کی جانب سے دھمکیاں ملنے پر ہائیکورٹ سے سکیورٹی بھی مانگ لی ۔

ہریانہ کے علاقہ ہتھین کے 67سالہ شخص کے سات بچے ہیں اور سبھی شادی شدہ ہیں جبکہ اس کی بیوی چار سال قبل فوت ہو گئی تھی میڈیا رپورٹس کے مطابق لڑکی بھی پہلے سے شادی شدہ ہے مگر اس کی اولاد نہیں ، لڑکی کے گاو¿ں میں کوئی زمینی تنازعہ تھا اور یہ 67سالہ شہری اس معاملے کو سلجھانے کیلئے وہاں جاتا تھا جہاں ان دونوں میں رابطہ ہوا اور دونوں نے پسند کی شادی کر لی بعد ازاں لڑکی کے خاندان کی دھمکیوں پر ہریانہ اور پنجاب دونوں کے ہائیکورٹس سے تحفظ کیلئے رجوع کر لیا۔

معاملے کی سنگینی کے پیش نظر دونوں ہائیکورٹس نے ایس پی کو ٹیم بنانے کا حکم دیا اور سکیورٹی مہیا کرنے کی ہدیات دی ۔ معاملے پر بات کرتے ہوئے پولیس افسر نے بتایا کہ شادی کرنے والے جوڑے کی جانبس ے عدالت میںد رخواست دائر ہے کہ ہمیں لڑکی کے خاندان سے جان کا خطرہ ہے جبکہ عدالت نے پولیس کو ہدایت کی ہے کہ دونوں کو سکیورٹی فراہم کی جائے ۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -بین الاقوامی -