بیروت بندرگاہ دھماکے کی پہلی برسی پر مظاہرے پر تشدد روپ اختیار کر گئے ، مظاہرین کا پارلیمنٹ پر حملہ 

بیروت بندرگاہ دھماکے کی پہلی برسی پر مظاہرے پر تشدد روپ اختیار کر گئے ، ...
بیروت بندرگاہ دھماکے کی پہلی برسی پر مظاہرے پر تشدد روپ اختیار کر گئے ، مظاہرین کا پارلیمنٹ پر حملہ 

  

بیروت ( ڈیلی پاکستان آن لائن ) لبنان کے دارالحکومت بیروت کی بندرگاہ پر ہولناک دھماکے کی پہلی برسی پر ہونے والے مظاہرے پرتشدد رنگ اختیار کر گئے ، مظاہرین نے پارلیمنٹ پر حملہ کیا اور داخلی دروازے پر پتھراؤ کیا۔

العربیہ کے مطابق بیروت میں ایک سال قبل بندرگاہ کے گودال میں ہونے والے خوفناک دھماکے میں تقریبا دو سو افراد ہلاک اور 6500 سے زائد زخمی ہو گئے تھے ۔ گزشتہ روز واقعے کی پہلی برسی پر مظاہرین نے دھماکوں کی وجوہات کے بارے میں حقائق سامنے لانے اور ذمہ داروں کو قصور وار ٹھہراتے ہوئے سزا کا مطالبہ کیا۔ بندر گاہ کے آس پاس مظاہرین اور فوج کے درمیان جھڑپیں ہوئیں جس سے بھگدڑ بھی مچی جس میں ریڈ کراس کے مطابق 84مظاہرین زخمی ہوئے ۔ سکیورٹی فورسز نے مظاہرین کو پارلیمنٹ کے قریب سے مشتعل کرنے کیلئے آنسو گیس اور واٹر کینن کا استعمال کیا۔

مظاہرین کے مطابق سکیورٹی فورسز کی جانب سے ربڑ کی گولیاں فائر کی گئیں تاہم سکیورٹی فورسز نے اس کی سختی سے تردید کی ۔ رپورٹس سے پتہ چلتا ہے کہ مظاہرین نے پارلیمنٹ کے دروازے کے قریب نقب لگا کر گیٹ کے قریب آگ لگا دی ۔

مزید :

بین الاقوامی -