وفاقی وزیر مراد سعید کی تصویر سلائیڈز میں کیوں چلائی؟سینیٹ کی قائمہ کمیٹی کے اراکین نے بڑی دھمکی دے دی

وفاقی وزیر مراد سعید کی تصویر سلائیڈز میں کیوں چلائی؟سینیٹ کی قائمہ کمیٹی کے ...
وفاقی وزیر مراد سعید کی تصویر سلائیڈز میں کیوں چلائی؟سینیٹ کی قائمہ کمیٹی کے اراکین نے بڑی دھمکی دے دی

  

 اسلام آباد( ڈیلی پاکستان آن لائن)سینیٹ کی قائمہ کمیٹی برائےمواصلات نےوفاقی وزیر برائےمواصلات مرادسعید کی اجلاس میں عدم شرکت پرشدیدبرہمی کااظہارکیاہے،رکن کمیٹی کامل علی آغا نے ڈیجیٹل بریفنگ کے دوران وفاقی وزیر مراد سعید کی تصویر سلائیڈز میں شامل کئےجانےپر اعتراض اٹھاتے ہوئے اسے ہٹانے کا مطالبہ کر دیا، کامل علی آغا نے کہا کہ مجھے منسٹر کی تصویر پر اعتراض ہے، اس کو ہٹائیں،وہ اجلاس میں نہیں آئے جبکہ سینیٹر دنیش کمار نے کہاکہ آئندہ اگر وزیر مواصلات نہیں آئے تو ہم اجلاس کا بائیکاٹ کریں گے وہ کمیٹی کو سنجیدگی سے نہیں لے رہے، سینیٹر عبد الغفور حیدری نے بھی  وفاقی وزیر مراد سعید کی عدم موجودگی کی مذمت کی۔

تفصیلات کےمطابق سینیٹ کی قائمہ کمیٹی برائے مواصلات کا اجلاس چیئرمین کمیٹی پرنس احمد عمراحمد زئی کی صدارت میں ہوا،کمیٹی ارکان نے وفاقی وزیر برائے مواصلات کی اجلاس میں عدم موجودگی پر برہمی کا اظہار کیا ، رکن کمیٹی دنیشن کمار نے کہا کہ آج دوسری میٹنگ چل رہی ہے اور منسٹر صاحب غائب ہیں ،آئندہ اگر وہ نہیں آئے تو ہم اجلاس کا بائیکاٹ کریں وہ کمیٹی کو سنجیدگی سے نہیں لے رہے۔

چیئرمین کمیٹی نے کہا کہ منسٹر کیوں نہیں آئے؟ رکن کمیٹی کامل علی آغا نے کہا کہ اس پر سنجیدہ نوٹ لکھوائیں ، اس بارے میں وزیر اعظم کو لکھیں، رکن کمیٹی عبد الغفور حیدری نے وفاقی وزیر مواصلات کی عدم موجودگی کی مذمت کی ۔کامل علی آغا نے کہا کہ این ایچ اے کے چہرے پر یہ سیاہ دھبہ ہے کہ نیشنل ہائی ویز کو یہ نظر انداز کر رہے ہیں، ہم دو گھنٹے میں لاہور سے گوجر خان پہنچ جاتے تھے، آج چھ گھنٹے میں لاہور سے اسلام آباد پہنچ کر دکھا دیں، یہ اصل حقائق کو چھپاتے ہیں، یہ نیشنل ہائی ویز کو کیوں نہیں مانیٹر کر رہے؟ یہ قومی مجرم ہیں، اس طرف توجہ نہیں دے رہے، یہ بتائیں نا کہ لاہور سے گوجرانولا تک کتنے موٹر سائیکل اور کتنے چنگچی رکشے چل رہے ہیں؟ لاہور سیالکوٹ موٹروے پر کوئی پیٹرول پمپ ،ریسٹ ایریا نہیں ہے۔

 اجلاس میں این ٹی آر سی سے متعلق بریفنگ دی گئی، جبکہ بلوچستان کے لیئے گزشتہ تین سالوں کے دوران این ایچ اے بورڈ کی جانب سے منظور کئے گئے منصوبوں پر بھی بریفنگ دی گئی ، رکن کمیٹی دنیش کمار نے کہا کہ بلوچستان میں کوئی موٹروے نہیں ہے ، ایک روڈ بتائیں کہ جو وہاں پر موٹروے ہو، این ایچ اے حکام نے کمیٹی کو بتایا کہ گوادر ہوشاب سڑک 200کلومیٹر مکمل ہو چکی ہے ۔

مزید :

علاقائی -اسلام آباد -