ڈی پورٹ ہونے کی صورت میں نواز شریف کسی دوسرے ملک جا سکتے ہیں ؟ تہلکہ خیز دعویٰ سامنے آ گیا

ڈی پورٹ ہونے کی صورت میں نواز شریف کسی دوسرے ملک جا سکتے ہیں ؟ تہلکہ خیز ...
 ڈی پورٹ ہونے کی صورت میں نواز شریف کسی دوسرے ملک جا سکتے ہیں ؟ تہلکہ خیز دعویٰ سامنے آ گیا

  

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن)سابق وزیر اعظم نوازشریف کے پاس کوئی مستند سفری دستاویز موجود نہیں ہیں،برطانیہ سے ڈی پورٹ ہونے کی صورت میں وہ پاکستان کے علاوہ کسی دوسرے ملک اس وقت تک سفر نہیں کر سکتے جب تک سرکاری طور پر وہ ملک انہیں اپنے ہاں آنے کی دعوت نہ دے ، نوازشریف کے پاسپورٹ کی مدت 16 فروری2021 کو ختم ہوچکی ہے۔

نجی ٹی وی نے ذرائع کے حوالے سے بتایا کہ نوازشریف کے پاس سابق وزیراعظم کی حیثیت سے سفارتی پاسپورٹ تھا، نواز شریف کے سفارتی پاسپورٹ کا نمبر بی 512363 ہے۔ذرائع کے مطابق وفاقی حکومت نے نواز شریف کے پاسپورٹ کی تاحال تجدید نہیں کی، نوازشریف برطانیہ میں ویزا کے لیے اپیل مسترد ہونے پر ممکنہ طور پر برطانوی عدالتوں سے رجوع کریں گے۔،برطانوی عدالتوں نے بھی نواز شریف کےخلاف فیصلہ دیا تو انہیں پاکستان ڈی پورٹ کیا جا سکتا ہے تاہم کسی ملک کی جانب سے سرکاری طور پردعوت ملنے پر نوازشریف کسی دوسرے ملک جاسکتے ہیں۔

مزید :

قومی -