پاکستانی قوم ہمیشہ کی طرح مظلوم کشمیری عوام کیساتھ کھڑی ہے: مشتاق احمد غنی

پاکستانی قوم ہمیشہ کی طرح مظلوم کشمیری عوام کیساتھ کھڑی ہے: مشتاق احمد غنی

  

       پشاور (سٹاف رپورٹر)قائمقام گورنر خیبرپختونخوامشتاق احمدغنی نے یوم استحصال کشمیر کے موقع پراپنے پیغام میں کہاہے کہ مقبوضہ کشمیر میں صدیوں سے جاری بھارتی مظالم کے باعث کشمیری عوام پر ہر لمحہ بھاری ہے لیکن 5 اگست 2019 کو مودی حکومت نے مقبوضہ جموں و کشمیر کی قانونی حیثیت کو تبدیل کر  کے  نہ صرف مقبوضہ کشمیر کا استحصال کیا بلکہ مظلوم کشمیری عوام پر ظلم و بربریت کے ایک نئے دور کا آغاز کیا۔آج خیبر پختونخوا سمیت ملک بھر کے عوام 5 اگست کو ''یوم استحصال کشمیر'' منا کر دنیا کو باور کرا رہے ہیں کہ پاکستانی قوم ہمیشہ کیطرح مظلوم کشمیری عوام کے ساتھ کھڑی ہے اور ہر محاذ پر کشمیری عوام کی اخلاقی و سفارتی حمایت جاری رکھے گی۔ مشتاق احمدغنی کاکہناتھاکہ آج کے دن عالمی برادری کو بتانا چاہتا ہوں کہ 5 اگست کو بھارتی حکومت کا مقبوضہ کشمیر کی خصوصی آئینی حیثیت تبدیل کرنے، بدترین کرفیو اور بھارتی فوج کا محاصرہ بھارت کے مکروہ عزائم کو ظاہر کرنے کیلئے کافی ہے جو خطہ کے امن کیلئے بہت بڑا خطرہ ہے، عالمی برادری کو دیکھنا چاہئے کہ کس طرح بھارت مقبوضہ کشمیر سے متعلق اقوام متحدہ اور سلامتی کونسل کی قراردادوں کی کھلم کھلا خلاف ورزی کر رہا ہے اور کشمیری عوام پر ہر گزرتے دن کے ساتھ مظالم میں اضافہ کرتا جا رہا ہے جو عالمی انسانی حقوق کے اداروں کیلئے  ایک کڑا امتحان اوربھی لمحہ فکریہ ہے۔ قائمقام گورنرنے کہاکہ آج کے دن ملک بھر بالخصوص خیبر پختونخوا کے عوام اور حکومت کیجانب سے مظلوم کشمیری بھائیوں کو یقین دلاتا ہوں کہ وہ حق جدوجہد آزادی میں خود کو تنہا نہ سمجھیں اور انشاء اللہ وہ دن ضرور آئے گا جب کشمیری عوام اپنے حق جدوجہد آزادی اور حق خودارادیت و خودمختاری حاصل کرنے میں کامیاب ہوں گے،  انہوں نے ایک بار پھر عالمی دنیا سے اپیل کی کہ وہ بھارت کے غاصبانہ قبضہ سے کشمیری عوام کو نجات دلانے کیلئے اپنا عملی کردار ادا کریں اور نہتے مظلوم کشمیری عوام پر بھارتی حکومت و فوج کے ریاستی ظلم و تشدد روکنے اور بنیادی انسانی حقوق کی فراہمی کیلئے فوری مداخلت کرتے ہوئے اپنی  ذمہ داری نبھائیں۔ #

مزید :

صفحہ اول -