ارسلان افتخار کیس: شعیب سڈل کمیشن نے عبوری رپورٹ تیارکرلی ، کل پیش کیے جانے کا امکان

ارسلان افتخار کیس: شعیب سڈل کمیشن نے عبوری رپورٹ تیارکرلی ، کل پیش کیے جانے ...

  

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) شعیب سڈل کمیشن کی عبوری رپورٹ میں کہاگیاہے کہ ارسلان افتخار کے بیرون ملک دوروں پر خرچ ہونے والی رقم 50 لاکھ روپے سے کم ہے جبکہ اُنہوں نے 45 لاکھ روپے کی ادائیگی کے چیک جمع کرا دیے ہیں۔یہ رپورٹ جمعرات کو سپریم کورٹ میں پیش کیے جانے کا امکان ہے۔شعیب سڈل کمیشن کے ذرائع کے مطابق تحقیقات اور دستیاب شواہد کے مطابق ارسلان افتخار کے بیرونی دوروں پر پچاس لاکھ روپے خرچ ہوئے اور اُن میں سے ارسلان افتخار نے احمد خلیل کے منیجر کو 45 لاکھ روپے واپس کیے اور ان کے چیک کی کاپی کمیشن کو فراہم کردی گئی۔ ارسلان افتخار کے ذمہ اب 5 لاکھ روپے سے بھی کم رقم بنتی ہے ، ارسلان افتخار کے ساتھ سفر کرنے والی خاتون احمد خلیل کی بیوی تھی اور اس دوران احمد خلیل بھی ان کے ہمراہ تھے۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ عبوری رپورٹ میں وزارت داخلہ کے عدم تعاون کی نشان دہی بھی کی گئی ہے اوروزارت داخلہ کے تعاون نہ کرنے کا ذمہ دار وزیر داخلہ رحمان ملک کو ٹھہرایا گیا ہے۔ذرائع کے مطابق عبوری رپورٹ میں فریقین کو شواہد جمع کرنے کیلئے ایک اور موقع دینے کی سفارش کی گئی ہے۔ دنیا نیوز کے مطابق ملک ریاض نے کہاکہ اُنہیں کمیشن پر اعتبار نہیں، تیار کردہ عبوری رپورٹ جھوٹی اور ناقابل اعتبار ہے۔ ارسلان افتخار کا اصل چہرہ عوام کے سامنے پہلے ہی لاچکا ہوں۔

مزید :

اسلام آباد -