ملٹری پولیس پر حملے کا ملزم گرفتار، اعتراف جرم، ٹارگٹ کلرز کی نشاندہی کر دی

ملٹری پولیس پر حملے کا ملزم گرفتار، اعتراف جرم، ٹارگٹ کلرز کی نشاندہی کر دی
ملٹری پولیس پر حملے کا ملزم گرفتار، اعتراف جرم، ٹارگٹ کلرز کی نشاندہی کر دی

  


کراچی (ویب ڈیسک) حساس ادارے نے ایم اے جناح روڈ پر ملٹری پولیس کے اہلکاروں پر حملے میں ملوث ایک اہم ملزم کو ویسٹ زون سے حراست میں لے لیا ہے جس نے واردات میںملوث ہونے کا اعتراف کرنے کے علاوہ ٹارگٹ کلرز کی نشاندہی بھی کر دی۔ ذرائع کے مطابق سی سی ٹی وی فوٹیج سے ملزمان کی شناخت کے دوران حساس ادارے کے ایک اہلکار نے ایک دہشت گرد کو پہچان لیا جو واردات کے وقت بھی فوجی گاڑی کے قریب موجود تھا۔ ملزم کی شاخت کے بعد فوری ویسٹ زون میں کارروائی کر کے ملزم کو گرفتار کر لیا گیا جس سے نامعلوم مقام پر تفتیش کی گئی۔ ذرائع کے مطابق گرفتار دہشت گرد اپنے کمانڈرز کی ہدایت کے مطابق تمام واردات اور دہشت گرد ٹیم کی نگرانی کر رہا تھا جبکہ واردات کے دوران اس نے ایک گولی بھی نہیں چلائی اور واردات کے فوری بعد فون پر اس نے کوڈ میں اپنے کمانڈر کو پیغام بھی دیا جس کا ثبوت حساس ادارے نے کال ٹریسنگ اور جیو فنسنگ سے حاصل کیا ہے۔ گرفتار ملزم کا تعلق کالعدم تنظیم سے ہے جو کافی عرصے سے نگرانی میں تھا۔ ملزم کی گرفتاری جلد ہی وفاقی سطح پر ظاہر کر دی جائے گی۔ دوسری جانب فرانزک ڈویڑن کی رپورٹ کے مطابق واردات میں استعمال ہونے والا اسلحہ نومبر 2014ءسے دہشت گردی میں استعمال ہو رہا ہے جس سے رینجرز، پولیس، پاک فوج کے اہلکاروں سمیت ڈاکٹرز اور دیگر افراد کو ٹارگٹ کیا جا چکا ہے۔ دریں اثناءکراچی میں ملٹری پولیس کی گاڑی پر حملے کی تحقیقات میں پیش رفت ہوئی ہے، دہشت گردوں کی نشاندہی کے لئے تین عینی شاہدین نے پولیس سے رابطہ کر لیا۔ ان کی مدد سے خاکے تیار کئے جا رہے ہیں۔ دریں اثناءسانحہ صفورا کا اہم ملزم عبداللہ منصوری کو سہراب گوٹھ سے گرفتار کیا گیا۔ ملزم چہلم امام حسین اور بلدیاتی انتخابات میں حملوں کی منصوبہ بندی کر رہا تھا۔ ملزم عبداللہ واردات کے بعد روپوش ہو جاتا تھا۔ علاوہ ازیں پاکستان رینجرز سندھ نے کراچی کے مختلف علاقوں میں کارروائیاں کر کے 4 دہشتگردوں کو گرفتار کر لیا۔ دہشت گردوں کے قبضے سے اسلحہ بھی برآمد ہوا ہے۔ ترجمان رینجرز سندھ کے مطابق ہجرت کالونی، لیاقت آباد اور سائٹ کے علاقوں میں کارروائیاں کر کے کالعدم تنظیم سے تعلق رکھنے والے 4 دہشت گردوں کو گرفتار کر لیا گیا۔ دریں اثناءایک روز قبل لیاری میں مقابلے کے دوران مارے گئے دہشت گرد کالعدم تحریک طالبان کے کارکن تھے۔ دریں اثناءرینجرز نے لیاقت آباد سندھی ہوٹل کے قریب چھاپہ مار کر ایم کیو ایم کے یونٹ انچارج سمیت تین افراد کو گرفتار کر لیا۔

مزید : کراچی