وزیراعظم یوتھ لون سکیم کیا ہے؟ نوجوان کس طرح قرضہ لے سکتے ہیں، درخواست جمع کرانے کا طریقہ کیا ہے؟ وہ معلومات جو آپ کی زندگی بدل سکتی ہیں

وزیراعظم یوتھ لون سکیم کیا ہے؟ نوجوان کس طرح قرضہ لے سکتے ہیں، درخواست جمع ...
وزیراعظم یوتھ لون سکیم کیا ہے؟ نوجوان کس طرح قرضہ لے سکتے ہیں، درخواست جمع کرانے کا طریقہ کیا ہے؟ وہ معلومات جو آپ کی زندگی بدل سکتی ہیں

  


اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک)وزیراعظم نواز شریف نے نوجوانوں کے لیے دیگر اہم سکیموں کے علاوہ قرضہ سکیم کا اعلان بھی کیا ہے۔ یہ سکیم ان نوجوانوں کے لیے شروع کی گئی ہے جو اپنا کوئی کاروبار شروع کرنا چاہتے ہیں۔ اس کے لیے کاروبار کی نوعیت کی کوئی قید نہیں، مثال کے طور پر آپ اس سکیم کے تحت قرض لے کر کیٹرنگ کمپنی بھی کھول سکتے ہیں۔اس سکیم سے ملک کے تمام صوبوں کے نوجوان یکساں طور پر مستفید ہو سکتے ہیں۔ ہر وہ شخص اس سکیم سے قرض لینے کا اہل ہے جو پاکستانی شہری ہو اور اس کے پاس پاکستان کا قومی شناختی کارڈ ہو۔اس کی عمر 21سال سے 45سال ہونی چاہیے۔ نیا کاروبار شروع کرنے والوں کے ساتھ ساتھ اپنے موجودہ کاروبار کو توسیع دینے کے لیے بھی آپ اس سے قرض لے سکتے ہیں۔

مزیدجانئے: دنیا کے وہ ممالک جہاں پاکستانی روپے خرچ کرتے وقت آپ خود کو بے حد امیر محسوس کریں گے

اس سکیم میں مردو خواتین میں کوئی تخصیص نہیں برتی گئی، سکیم کے لیے مختص فنڈز میں سے خواتین کو مردوں کے برابر یعنی 50فیصد تک قرض فراہم کیا جائے گا۔ ماضی میں کسی بھی لون سکیم میں خواتین کو 50فیصد کا حصے دار نہیں بنایا گیا جس پر سخت تنقید بھی کی جاتی رہی ہے۔سکیم کے تحت نوجوانوں کو قرض سے قبل کاروبار کے متعلق مشاورت بھی فراہم کی جائے گی تاکہ وہ اپنے لیے کسی بہتر کاروبار کا انتخاب کر سکیں۔سکیم کے تحت نوجوان 1لاکھ سے 20لاکھ روپے تک قرض لے سکتے ہیں، یہ قرض انہیں صرف 8فیصد شرح سود پر دیا جائے گا۔قرض کی واپس ادائیگی کی قسطیں قرض کی رقم اور کاروبارکی نوعیت کی مناسبت سے بنائی جائیں گی، یہ قسطیں سالانہ بھی ہو سکتی ہیں اور ماہانہ بھی۔

سکیم کے تحت قرض لینے کے خواہشمند خواتین و حضرات کو ایک عدد ضمانتی شخص کا بھی انتظام کرنا ہو گا۔ امیدوار ہر اس شخص کو اپنا ضامن بنا سکتے ہیں جو سرکاری ملازم ہو اور اس کا بیسک پے سکیل 16یا اس سے زیادہ ہو۔ اس کے علاوہ کسی ایسے شخص کو بھی ضامن بنایا جا سکتا ہے جس کے بینک اکاﺅنٹ میں قرض کی رقم سے ڈیڑھ گنا یا اس سے زیادہ رقم موجود ہو۔ قرض لینے کے لیے درخواست دینے کا عمل انتہائی سادہ ہے۔ سب سے پہلے آپ کو ان بینکوں کے بارے میں علم ہونا چاہیے جو اس سکیم سے منسلک ہیں۔ان بینکوں کی فہرست آپ نیچے پڑھ سکتے ہیں۔اپنے قریب ترین موجود ان میں سے کسی بھی بینک کی برانچ میں جا کر آپ ایپلی کیشن فارم حاصل کر سکتے ہیں۔یا یہ فارم سمیڈا(SMEDA) اور وزیراعظم آفس کی ویب سائٹس سے بھی ڈاﺅن لوڈ کیا جا سکتا ہے۔یہ فارم پر کرکے آپ بینک میں جمع کروا سکتے ہیں۔

مزید جانئے: ایٹم بم کے دھماکے میں زندہ کس طرح بچاجاسکتا ہے؟ بے حد سادہ، انتہائی ضروری معلومات

اس قرض کی کوئی اختتامی مدت نہیں ہے۔ آپ سال میں کسی بھی دن قرض کے لیے درخواست دے سکتے ہیں۔ اگر آپ کا فارم منظور کر لیا گیا تو سب سے پہلے ایک ٹیلی فون کال کے ذریعے اس کی تصدیق کی جائے گی۔ اس کے بعد ایک نمائندہ آپ کے پاس آ کر تمام معاملات کی تصدیق کرے گا۔ اس کے بعد محکمانہ کارروائی کے بعد آپ کو قرض جاری کر دیا جائے گا۔ اس کارروائی میں 15دن یا اس سے زائد کا عرصہ لگ سکتا ہے۔جب آپ کا قرض منظور ہو گیا تو بینک آپ سے کسی بھی ذریعے سے رابطہ کرے گا۔ اس کے ساتھ آپ کو سکیم کی طرف سے 80028نمبر سے ایس ایم ایس یا فون کال موصول ہو گی جس میں قرض منظور ہونے کی تصدیق کی جائے گی۔ اس کے علاوہ کسی بھی نمبر پر اعتبار مت کریں۔

درج ذیل بینک سکیم سے منسلک ہیں

فرسٹ وومن بینک لمیٹڈ

حبیب بینک لمیٹڈ

حبیب میٹروپولیٹن بینک

بینک الحبیب

سندھ بینک

سمٹ بینک

سنہری بینک

میزان بینک

البرکة بینک

دبئی اسلامک بینک

الائیڈ بینک لمیٹڈ

مسلم کمرشل بینک

جے ایس بینک

یونائیٹڈ بینک لمیٹڈ

عسکری بینک

ان بینکوں کی کسی بھی برانچ سے رابطہ کیا جا سکتا ہے۔

مزید : قومی