بلدیاتی انتخابات ملتان ،متوالوں اور کھلاڑیوں کے درمیان گھمسان کارن پڑنے کا امکان ،جیالے آؤٹ

بلدیاتی انتخابات ملتان ،متوالوں اور کھلاڑیوں کے درمیان گھمسان کارن پڑنے کا ...

ملتان(راؤ نعمان سے)بلدیاتی انتخابات کے تیسرے اور آخری مرحلے کا دنگل آج لگے گا ملتان ضلع میں یہ مقابلہ مسلم لیگ(ن)،پاکستان تحریک انصاف اور آزاد امیدواروں کے درمیان ہو گا جبکہ پیپلز پارٹی اس مقابلے کی دوڑ سے باہر ہو چکی ہے آج کے انتخابی دنگل میں ضلع بھر کی 185یونین کونسلوں سے امیدوار کھڑے ہیں یہاں یہ بات قابل ذکر ہے کہ ضلع بھر میں مسلم لیگ(ن)نے 26یونین کونسلوں میں اپنے چئیر مین اور وائس چئیر مین کے امیدوار نہیں کھڑے کئے جبکہ پاکستان تحریک انصاف کی طرف سے 39نشستوں پر امیدوار نہیں ہیں پورے ضلع میں پیپلز پارٹی کی طرف سے کل 57یونین کونسلوں سے چئیر مین اور وائس چئیرمین کے امیدوار کھڑے ہیں یعنی پیپلز پارٹی کو ضلع بھر کی 128یونین کونسلوں سے چئیر مین اور وائس چئیر مین کے امیدوار ہی نہیں ملے ہیں اور پورے ضلع میں سب سے کم امیدوار مسلم لیگ(ق)کی طر ف سے میدان میں ہیں جن کی کل تعداد صرف تین ہے اگر ملتان شہر کی 68یونین کونسلوں کا جائزہ لیا جائے تو شہر کی صرف ایک یونین کونسل نمبر 67ہے جہاں پاکستان تحریک انصاف نے کسی کو پارٹی ٹکٹ نہیں دیا اور اس حلقے میں پی ٹی آئی آزاد امیدوار کو سپورٹ کر رہی ہے شہر کی دو یونین کونسلوں سے مسلم لیگ (ن)کے حمایت یافتہ امیدوار بلا مقابل کامیاب ہو چکے ہیں باقی جو 66یونین کونسلیں ہیں ان میں پیپلز پارٹی کی طرف سے صرف 11یونین کونسلوں سے چئیر مین اور وائس چئیر مین کے امیدوار کھڑے ہیں جبکہ جماعت اسلامی کی طر ف سے بھی 11یونین کونسلوں میں چئیر مین اور وائس چئیر مین کے امیدوار کھڑے ہیں ایجنسیوں کی رپورٹ کے مطابق آج کے انتخابی دنگل میں بظاہر تو مسلم لیگ (ن)کامیاب ہوتی دکھائی دے رہی ہے لیکن شہری یونین کونسلوں میں تحریک انصاف اپ سیٹ کر سکتی ہے بالخصوص ایم این اے ملک عامر ڈوگر اور ایم پی اے جاوید انصاری کے حلقوں سے امیدوار مسلم لیگ(ن)کے امیدواروں سخت امتحان میں ڈال سکتے ہیں اور مجموعی طور پر پورے ضلع میں مقابلہ مسلم لیگ(ن)اور آزاد امیدواروں کے درمیا ن ہو گا تا ہم فتح کا تاج کس کے سر پر سجے گا اس کا فیصلہ آج رات تک ہو جائے گا. ۔ ملتان کی 2یونین کونسلر پر مسلم لیگ ن کے 2چیئرمین بلا مقابلہ منتخب ہو چکے ہیں۔ یوسی 60سے سابق صوبائی وزیر اوقاف حاجی احسان الدین قریشی کے صاحبزادے منور احسان قریشی اپنے پورے پینل جنرل کونسلر کے ساتھ بلا مقابلہ منتخب اور یوسی 26سے سابق صوبائی وزیر زکوٰۃ عشر کے والد میاں سعید انصاری منتخب ہو چکے ہیں۔ سب بڑا امتحان پیپلز پارٹی اور سرائیکی پارٹی کیلئے ہے کہ کوئی سیٹ نکال سکتی ہیں یا نہیں۔

مزید : صفحہ اول