انتخابات کا تیسرا مرحلہ، مسلم لیگ ن اور تحریک انصاف میں اصل مقابلہ

انتخابات کا تیسرا مرحلہ، مسلم لیگ ن اور تحریک انصاف میں اصل مقابلہ

ملتان(احمد حسن مفتی سے) بلدیاتی انتخابات کے پہلے اور دوسرے مرحلے کے بعد تیسرے مرحلے میں بھی پنجاب میں اصل مقابلہ حکومعت مسلم لیگ (ن) اور تحریک انصاف کے مابین ہوگا۔(بقیہ نمبر17صفحہ12پر )

ضلع ملتان میں جہاں دونوں جماعتوں کے امیدوار مد مقابل ہیں وہیں دھڑے بندیوں کے باعث درجن سے زائد یونین کونسلوں میں دونوں جماعتوں کو اپنی ہی پارٹی کے کارکنوں کا بطور آزاد امیدوار بھی سامنا کر نا پڑ رہا ہے جو انکو ٹف ٹائم بھی دینگے۔اگر مسلم لیگ(ن) کی بات کی جائے تو یوسی 3سے لیگی امیدوار فیض احمد کو لیگی آزاد امیدوار جمشید خان ترین، یوسی 4میں لیگی امیدوار کوثر شاہ کو لیگی آزاد امیدوار راو انیس الر حمٰن، یو سی14میں لیگی امیدوار رائے عارف منصب کو لیگی آزاد حاجی شیخ ترین،یوسی 31میں لیگی امیدوار شیخ تنویر کو لیگی آزاد امیدوار زاہد عدنان گڈو، یوسی 36 میں لیگی امیدوار رسالت شیروانی کو لیگی آزاد امیدوار شاہد مختیار لودھی، سمیت دیگر کو اپنی ہی پارٹی کے آزاد امیدوار کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے اسی طرح اگر تحریک انصاف کی بات کی جائے تو یوسی 6سے تحریک انصاف کے امیدوار معروف طارق نعیم اللہ کو تحریکی آزاد امیدوار مظہر ملغانی، یوسی 12سے تحریک انصاف کے امیدوار ساجد بشیر کو تحریکی آزاد امیدوار ہدایت اللہ ، یوسی 64میں تحریک انصاف کے امیدوار یوسف ڈمرا کو تحریکی آزاد امیدوا عاطف اعوان، سمیت دیگر کو اپنی ہی پارٹی کے آزاد امیدوار کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے ۔دلچسپ بات یہ ہے کہ دونوں سیاسی جماعتوں کے ناراض کارکن جو آزاد حیثیت سے الیکشن لڑ رہے ہیں انکو دونوں سیاسی جماعتوں کے اراکین اسمبلی ، ٹکت ہولڈر اور مرکزی رہنماوں کی پشت پناہی حاصل ہے ۔اب دیکھنا یہ ہے کہ آج عوام کس کو ووٹ دیکر کامیاب بناتے ہیں۔

مزید : ملتان صفحہ آخر