خواتین کو ووٹ سے روکنے کے لیے پنجائیتوں کے فیصلے غلط ہیں : الیکشن کمیشن

خواتین کو ووٹ سے روکنے کے لیے پنجائیتوں کے فیصلے غلط ہیں : الیکشن کمیشن
خواتین کو ووٹ سے روکنے کے لیے پنجائیتوں کے فیصلے غلط ہیں : الیکشن کمیشن

  


راولپنڈی (این این آئی)سیکرٹری الیکشن کمشنر بابر یعقوب نے کہا ہے کہ خواتین کو ووٹ سے روکنے کے لیے پنجائیتوںکے فیصلے غلط ہیں ¾جن حلقوں میں خواتین کو ووٹ ڈالنے سے روکا جائےگا وہاں الیکشن تصور نہیں ہوگا ۔وہ ہفتہ کوبلدیاتی الیکشن کے تیسرے مرحلے میں جاری بلدیاتی الیکشن کی پولنگ کے عمل کے جائزہ کےلئے ڈویژنل پبلک سکول میں بنائے گئے پولنگ سٹیشن کے دورہ کے موقع پر میڈیا سے گفتگو کر رہے تھے ۔کمشنر راولپنڈی کیپٹن(ر) زاہد سعید اور ڈی سی او ساجد ظفر ڈال بھی ان کے ہمراہ تھے ۔ایک سوال کے جواب میں سیکرٹری الیکشن کمیشن نے کہا کہ چیف الیکشن کمشنر جسٹس(ر) سردار محمد رضا نے تمام ڈی آر او ز کو ہدایات دیں ہیں کہ وہ خواتین کو ووٹ سے روکنے کا سدباب کریں ‘جہاں خواتین کو ووٹ ڈالنے سے روکا گیا وہاں پر الیکشن تصور ہی نہیں ہوگا ‘خواتین کو ووٹ ڈالنے سے روکنے کے حوالے سے پنجائیتوں اور قبیلوںکے فیصلے غلط ہیں ان کی کوئی حیثیت نہیں ہے ‘الیکشن کمیشن اس بات پر یقین رکھتی ہے کہ خواتین سے آزادی سے ووٹ ڈالیں ۔ایک اور سوال کے جواب میں انہوںنے کہاکہ کراچی کے اندر رینجرز فول پروف سکیورٹی کےلئے الیکشن کمیشن سے مکمل معاونت کر رہی ہے ‘رینجرز کو خصوصی اختیارات دیدیئے گئے ہیں جو کسی بھی جھگڑے یا ہنگامی صورتحال میں فوری کارروائی کر سکیں گے ‘بلدیاتی الیکشن کے حوالے سے ڈائریکٹر جنرل رینجرز سے میری ملاقات بھی ہوئی ہے اور انہوں نے یقین دہانی کرائی تھی کہ پرامن بلدیاتی الیکشن کے لیے تمام تر صلاحیتیں اور وسائل بروئے کار لائیں گے ‘ رینجرز نے کراچی میں بلدیاتی الیکشن کے لیے ساز گار فضاءقائم کی ہے اور ووٹروں کو بھی کہا ہے کہ وہ باہر نکلیں اور پرامن ماحول میں اپنا ووٹ ڈالیں ۔

مزید : راولپنڈی