باقاعدہ منصوبہ بندی کے تحت شوبز میں آئی ہوں،گل رعنا

باقاعدہ منصوبہ بندی کے تحت شوبز میں آئی ہوں،گل رعنا
 باقاعدہ منصوبہ بندی کے تحت شوبز میں آئی ہوں،گل رعنا

  

لاہور(فلم رپورٹر)اداکارہ و ماڈل گل رعنا نے کہا کہ میں حادثاتی طور پر نہیں بلکہ باقاعدہ منصوبہ بندی کے تحت شوبز میں آئی ہوں ہمارے ملک میں ایک بہت بڑی برائی ہے کہ ہم باتیں زیادہ لیکن عمل کم کرتے ہیں ۔میں اس بات پر فخر کرتی ہوں جو باتوں کی بجائے عمل پر یقین رکھتے ہیں۔پاکستان میں فیشن انڈسٹری نے نا قابل یقین ترقی کی ہے ۔گل رعنا نے بتایا کہ ہمارے ملک میں شوبز کو بہت برا شعبہ مانا جاتا ہے جبکہ میرا کہنا ہے دنیا کا کوئی بھی شعبہ برا نہیں ہوتا انسان خود برا ہوتا ہے میں کافی عرصے سے گلیمر ورلڈ سے وابستہ ہوں میں نے آج تک یہاں پر کوئی برائی نہیں دیکھی۔

یہ دنیا کا واحد شعبہ ہے جس میں عزت،دولت اور شہرت تینوں ہیں۔انہوں نے بتایا کہ پاکستان میں بین الاقوامی معیار کی آرٹ اکیڈیمی کا فوری قیام وقت کی اہم ضرورت ہے اس سلسلے میں حکومت کی سرپرستی ضروری ہے ۔فلم ،ٹی وی اور تھیٹر تینوں آرٹ کے شعبے ہیں لیکن میں ٹی وی اور ماڈلنگ تک اپنی فنّی سرگرمیاں محدود رکھنا چاہتی ہوں کیونکہ فلم تقریباً ختم ہوچکی ہے اور تھیٹر اس قابل نہیں جہاں پر کوئی بھی پڑھی لکھی لڑکی کام کرسکے تھیٹر میں پرفارمنس کے نام فحاشی کا بازار گرم ہے۔ایک سوال کے جواب میں گل رعنا بتایا کہ مجھے شعر و شاعری سے خصوصی لگاؤ ہے پروین شاکر اور محسن نقوی میرے پسندیدہ شاعر ہیں۔مجھے سیاست اور کھیلوں سے کوئی خاص لگاؤ نہیں ہے کرکٹ دیکھنے کی حد تک پسند ہے انہوں نے مزید بتایا کہ میں مستقبل میں ڈائریکشن کے شعبے میں طبع آزمائی کا ارادہ رکھتی ہوں۔ میں نے ہمیشہ وہ کردار قبول کئے ہیں جن میں کچھ کر دکھانے کا موقعہ ہوتا ہے۔ انہوں نے بتایا کہ میری آج تک کسی ساتھی فنکارہ سے لڑائی نہیں ہوئی ہے اس کی ایک وجہ یہ ہے کہ میں اپنے کام سے کام رکھتی ہوں ۔میں ریکارڈنگ مکمل ہوتے ہی سیدھی اپنے گھر جاتی ہوں۔میں اپنے آپ کو فلموں کے لئے مس فٹ سمجھتی ہوں۔میں نے اپنی مصروفیات سٹیج تک محدود کی ہوئی ہیں۔

مزید : کلچر