مائنس پلس کا کھیل ملک کیلئے انتہائی خطرناک ہے، شاہ اویس نورانی

مائنس پلس کا کھیل ملک کیلئے انتہائی خطرناک ہے، شاہ اویس نورانی

لاہور(ایجوکیشن رپورٹر)جمعیت علماء پاکستان کے مرکزی سیکریٹری جنرل صاحبزادہ شاہ محمد اویس نورانی نے کہا ہے کہ مائنس پلس کا کھیل ملک کے لئے انتہائی خطرناک ہے۔ امریکہ کو نو مور کہنے کا وقت آ گیا ہے۔ اہل سنت میں طالبانی سوچیں پروان نہیں چڑھنے دیں گے۔ نفرتوں کی سیاست ملک و قوم کے لئے تباہ کن ہے۔ ملک بچانے کے لئے نفرتیں مٹانے اور محبتیں پھیلانے کی ضرورت ہے۔ سیکولر لابی کے مقابلہ کے لئے دینی قوتیں متحد ہو جائیں۔ ہم اقتدار نہیں اقدار کی سیاست پر یقین رکھتے ہیں۔ جمہوریت کو چلنے دیا جائے۔

آئندہ الیکشن مقررہ وقت پر ہونے سے جمہوریت مضبوط ہو گی۔ ملک کسی نئی شدت پسندی کا متحمل نہیں ہو سکتا۔ ان خیالات کا اظہار انھوں نے مختلف علماء و مشائخ سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ شاہ اویس نورانی نے مزید کہا کہ بعض نادیدہ ہاتھ ملک کے اکثریتی مکتبہ فکر کو اپنے مقاصد کے لئے استعمال کرنا چاہتے ہیں لیکن ہم اس سازش کا راستہ روکیں گے۔ غلامان رسول کی حقیقی پہچان امن پسندی ہے۔ آئندہ الیکشن نظام مصطفے کے سلوگن پر لڑیں گے۔ ہماری جدوجہد مقام مصطفے کے تحفظ اور نظام مصطفے کے نفاذ کے لئے ہے۔ جے یو پی کے ضلعی کنونشنز کا سلسلہ شروع کر دیا ہے۔ ہر ضلع میں ورکرز کنونشن منعقد کیا جائے گا۔ جے یو پی کے سیکریٹری جنرل نے مزید کہا کہ افغانستان میں بھارت کی مداخلت خطے میں بدامنی کا سبب ہے۔ امریکہ اپنی فوجیں افغانستان سے نکالے اور افغانستان کی عوام کو اپنی قسمت کا آذادانہ فیصلہ کرنے کا موقع دے۔ امریکہ افغانستان میں امن چاہتا ہے تو اسے بھارت کا افغانستان میں عمل دخل ختم کرنا ہو گا۔ پاکستان سے ڈو مور کا امریکی مطالبہ ناقابل قبول ہے۔

مزید : میٹروپولیٹن 4