جگا ٹیکس نامنظور : ایل پی جی مہنگی کرنے کیخلاف 10جنوری کو خیبر سے کراچی تک احتجاج کا اعلان

جگا ٹیکس نامنظور : ایل پی جی مہنگی کرنے کیخلاف 10جنوری کو خیبر سے کراچی تک ...

لاہور (خبرنگار )ایل پی جی ڈسٹری بیوشن ایسوسی ایشن نے ایل پی جی کی قیمتوں میں کئی گنا اضافہ پر ملک گیر احتجاجی تحریک چلانے کا اعلان کردیا ہے ۔ حکومت کو8دسمبر تک ایل پی جی پر لیوی ٹیکس واپس لینے کا الٹی میٹم دیا گیاہے۔ ایل پی جی ڈسٹری بیوٹرز ایسوسی ایشن کے مرکزی چےئرمین عرفان کھوکھر اور مجید غوری چےئرمین عوامی رکشہ یونین نے مشترکہ پریس کانفرنس میں کہا کہ ہمیں ایل پی جی پر پریمیم بونس، سگنیچر بونس ریگولیٹوری ڈیوٹی اور لیوی ٹیکس کے نام پر جگا ٹیکس منظور نہیں جس پر قیمت بڑھنے کے خلاف 10جنوری 2018کوخیبر سے کراچی تک احتجاج کیا جائے گا۔ غریب عوام کو مہنگی گیس سپلائی کیلئے سرکاری کمپنی SSGC ایل پی جی کی قیمت بڑھانے میں بازی لے گئی اور ایل پی جی مافیا لوکل پیدا واری ایل پی جی پر لیوی ٹیکس لگنے کے بعد قیمتیں بڑھانے اور حکومت کی 4سال کی کوششوں پر پانی پھیرنے میں کامیاب ہو گیا۔غریب صارفین کیلئے سستی ایل پی جی میسر ناممکن ہے درآمد پر ریگولیٹری ڈیوٹی لگنے سے غریب عوام کا استحصال شروع ہو چکا ہے۔قیمتیں بڑھنے سے غریب عوام اور غریب رکشہ ڈرائیورسب سے ذیادہ متاثرہو رہے ہیں۔ سردیوں میں روزانہ کھپت 4500 میٹرک ٹن ہے جس کو پورا کرنے کیلئے روزانہ 2500میٹرک ٹن ایل پی جی کی درآمدکی ضرورت ہے۔ 2014میں 502232 میٹرک ٹن کی کھپت کو پورا کرنے کیلئے62117میٹرک ٹن ایل پی جی درآمد کی گئی جبکہ یہ مقدار 2015میں بڑھ کر875087میٹرک ٹن کی کھپت کو پورا کرنے کیلئے245578میٹرک ٹن درآمد کی گئی ۔2016میں1164706میٹرک ٹن کی کھپت پوری کر نے کیلئے 513788میٹرک ٹن درآمد کی گئی اور 2017کے صرف9ماہ میں852547میٹرک ٹن کی کھپت کو پورا کرنے کیلئے اب تک 331830میٹرک ٹن درآمد کی جا چکی ہے۔30ایل پی جی مارکیٹنگ کمپنیوں کے پاس لوکل ایل پی جی کوٹہ موجود جبکہ144میں سے 114ایل پی جی مارکیٹنگ کمپنیوں کادارومدارصرف درآمدی ایل پی جی پرہے ۔ایل پی جی درآمد پرریگولیٹری ڈیوٹی پوری ایل پی جی انڈسٹری کی تباہی کا باعث ہو گی جس کے بعد ایل پی جی کی درآمدبند ہونے سے ایل پی جی قیمت آسمانوں سے باتیں کرنے لگے گی اور قیمت 300روپے فی کلو سے تجاوز کر جائے گی۔انہوں نے حکومت وقت سے مطالبہ کیا کہ حکومت فوری نوٹس لے کر درآمدی ایل پی جی پر ریگولیٹری ڈیوٹی، لیوی ٹیکس اور تمام جگہ ٹیکس کو ختم کرائے کیونکہ اگر غریب عوام اور غریب رکشہ ڈرائیوروں کو سستی ایل پی جی سے محروم کیا گیا تو لاکھوں خاندانوں کے چولہے ٹھنڈے ہو جائیں گے۔ حکومت نے درآمدی ایل پی جی پر ریگولیٹری ڈیوٹی ختم نہ کی تو پہلے مرحلہ میں 10دسمبر2017کو سب سے پہلا احتجاجی مظاہرہ پریس کلب لاہور کے باہر پھر13دسمبر2017 وحدت روڈ اقبال ٹاؤن میں 17دسمبر2017کلمہ چوک لاہور24دسمبر 2017ایل پی جی سیمینار لاہورمیں کیا جائے گا جسکے بعد31دسمبر2017 کو لاہور میں لبرٹی چوک سے گورنر ہاؤس تک احتجاجی ریلی نکالی جائے گی اور گورنر ہاؤس کے سامنے احتجاجی دھرنا دیا جائے گا10جنوری2018 کو ملک گیر شٹر ڈاؤن پہیہ جام ہڑتال کی جائے گی۔جس میں رکشہ یونین کے نمائندے بھی ملک گیر ہڑتال میں شامل ہوں گے۔

ایل پی جی

مزید : صفحہ آخر