بلا تفریق احتساب تک قومی حکومت قائم کی جائے، عائشہ گلا لئی

بلا تفریق احتساب تک قومی حکومت قائم کی جائے، عائشہ گلا لئی

لاہور( این این آئی) تحریک انصاف کی منحرف رکن قومی اسمبلی عائشہ گلا لئی نے انتخابی اصلاحات اور ملک میں بلا تفریق احتساب تک قومی حکومت کے قیام کا مطالبہ کرتے کہا ہے کہ سپریم کورٹ اس تناظر میں اپنا کردارادا کرے ، حکومت تمام جاگیرداروں کی اراضی تحویل میں لے اور بعد ازاں اسے مساوی بنیادوں پر لیز پر تقسیم کیا جائے ، آئندہ تین سے چار ماہ تک اپنے آئندہ کے لائحہ عمل کا اعلان کروں گی اور عمران خان ملک کے جس بھی حلقے سے انتخاب لڑیں گے میں آزاد امیدوار کی حیثیت سے ان کا مقابلہ کروں گی ۔ ان خیالات کااظہار انہوں نے اپنے والد اور وکیل کے ہمراہ لاہور پریس کلب میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے کیا ۔ عائشہ گلا لئی نے کہا اس ملک کیلئے نہ آصف زرداری ،نہ نواز شریف اور نہ ہی عمران خان ٹھیک ہیں ۔ اگر انتخابی اصلاحات کئے بغیر انتخابات کرا ددئے گئے تو پھر کوئی جماعت دھاندلی کا الزام لگا کردھرنے پر بیٹھ جائے گی ۔ملک کی دولت لوٹنے والوں کا بلا تفریق احتساب کیا جائے، اس کیلئے موجودہ حکومت کو ختم کر کے پاکستان میں موجود بہترین سویلینز پر مشتمل قومی حکومت بنائی جائے اور سپریم کورٹ اس میں اپنا کردار ادا کرے ۔انہوں نے مزید کہا گزشتہ دنوں ملک میں جو حالا ت تھے اس سے خانہ جنگی کے خدشات ابھر رہے تھے لیکن فوج نے افہام و تفہیم سے معاملے کو حل کرایا اس پر سب کو فوج کا شکر گزار ہونا چاہئے لیکن الٹا فوج پر انگلیاں اٹھائی جارہی ہیں۔ انہوں نے اسٹیبلشمنٹ یا کسی کے کہنے پر قومی حکومت کے مطالبے کے سوال کے جواب میں کہا کہ کسی کے کہنے پر نہیں بلکہ عوام اور ملک کے بہترین مفاد میں یہ باتیں کہہ رہی ہوں ۔ میں پی ٹی آئی میں ہوں اور آئندہ تین سے چار ماہ میںآئندہ کے لائحہ عمل کا اعلان کروں گی ۔ انہوں نے کہا کہ عمران خان جذبات اور یو ٹرنز لینے والا انسان ہے، جہاز او رہیلی کاپٹر میں اڑنے والا کیسے غریب کے حقوق کی بات کرتا ہے۔

عائشہ گلا لئی

مزید : صفحہ آخر