حالیہ مردم شماری سے پنجاب کے 18 اضلاع میں حلقہ بندیا ں تبدیل ہو جائیں گی

حالیہ مردم شماری سے پنجاب کے 18 اضلاع میں حلقہ بندیا ں تبدیل ہو جائیں گی

اسلام آباد (آن لائن) ملک میں ہونے والی حالیہ مردم شماری کی وجہ سے پورے ملک میں نئی حلقہ بندیاں کرنی پڑیں گی اور ایک اندازے کے مطابق صرف پنجاب میں 18 اضلاع میں حلقہ بندیا ں تبدیل ہو جائیں گی۔کئی اضلاع میں قومی و صوبائی اسمبلی کی سیٹیں کم ہورہی ہیں تو کئی اضلاع میں سیٹوں کی تعداد زیادہ ہوجائے گی۔ مردم شماری کے مطابق جن اضلاع میں صوبائی اسمبلی کا ایک ایک حلقہ کم ہورہا ہے اْن میں جہلم ،سرگودھا،خوشاب ،فیصل آباد،جھنگ،ٹوبہ ٹیک سنگھ،گجرات،منڈی بہاؤلدین،شیخوپورہ،قصوراور اوکاڑہ شامل ہیں۔ جن اضلاع میں صوبائی اسمبلی کا ایک ایک حلقے کا اضافہ ہورہا ہے اْن میں راولپنڈی،چنیوٹ، ننکانہ،ڈی جی خان،مظفر گڑھاورراجن پور شامل ہیں جبکہ لاہور میں پانچ سیٹوں کا اضافہ ہوگا۔ ادارہ شماریات، مردم شماری سے اکٹھے ہونے والے ڈیٹا کو تفصیل سے دیکھ رہا ہے اور ابھی تک اس کے رزلٹ کو فائنل نہیں کیا گیا۔ ادارہِ شماریات کے مردم شماری کے نتائج کو فائنل کرنے کے بعد الیکشن کمیشن کو یہ رزلٹ دئے جائیں گے اور الیکشن کمیشن نئی حلقہ بندیاں کرے گا۔ اسی طرح قومی اسمبلی کی ضلع اٹک،فیصل آباد،گوجرانوالہ،حافظ آباد،نارووال،قصور،اوکاڑہ،ساہیوال اور پاکپتن سے ایک ایک قومی اسمبلی کی سیٹ کم ہوجائے گی جبکہ جھنگ اور شیخوپورہ سے قومی اسمبلی کی ڈیڑھ ڈیڑھ سیٹ کم ہوجائے گی۔ دوسری طرف پنجاب سے قومی اسمبلی کی 4 جنرل سیٹس خیبر پختونخوا کو منتقل ہوجائیں گی۔ 2 بلوچستان اور ایک اسلام آباد جبکہ لاہور،ڈیرہ غازی خان.مظفر گڑھ اور راجن پور کی ایک ایک نیز چنیوٹ اور ننکانہ صاحب کو آدھی آدھی سیٹ اضافی ملے گی۔

حلقہ بندیا ں تبدیل

مزید : علاقائی