ہیکروں نے جعلی اے ٹی ایم کارڈ سے 600صارفین کے کروڑوں روپے نکال لئے

ہیکروں نے جعلی اے ٹی ایم کارڈ سے 600صارفین کے کروڑوں روپے نکال لئے

اسلام آباد،کراچی(آن لائن)ہیکرز نے اسلام آباد اور کراچی کی اے ٹی ایم مشینوں پر ڈیوائس لگاکر ڈیٹا اور پاس ورڈ حاصل کرنے کے بعد 600سے زائد صارفین کے کروڑوں روپے نکال لیے ۔صارفین نے حبیب بنک میں شکایات جمع کرادیں تفصیلات کے مطابق اسلام آباد اور کراچی میں ہیکرز نے اے ٹی ایم مشینوں پر ڈیوائس لگا کر لوگوں کا ڈیٹا اور پاس ورڈ اکٹھا کرکے کروڑوں روپے اکاؤنٹس سے نکال لیے ہیں جس کے بعد لوگوں نے حبیب بنک میں شکایات کا ڈھیر لگا دیا ہے۔حبیب بنک نے بھی سٹیٹ بنک اور ایف آئی اے کو شکایات سے آگاہ کردیا ہے جس کے بعد کارروائیاں عمل میں لائی جاچکی ہے ۔ترجمان حبیب بینک نوید اصغر کے مطابق متاثرہ صارفین کے اکاؤنٹس سے ایک کروڑ روپے کی رقم نکالی گئی جبکہ 579صارفین کیاکاؤنٹس سے رقم نکلنے کی شکایات ملیں۔نوید اصغر نے کہا کہ ملک بھر میں ایچ بی ایل کے دو ہزار اے ٹی ایم لگے ہوئے ہیں تاہم صرف چار مشینوں پر سکمنگ ڈیوائس لگے ہونے کی شکایات موصول ہوئی ہیں۔انہوں نے بتایا کہ متاثر ہونے والی اے ٹی ایم میں ایک کراچی اور 3 اسلام آباد کی تھیں جنہیں کلیئر کردیا گیا ہے۔ان کا کہنا تھا کہ رقم نکلنے کی صورت میں بینک کی جانب سے صارف سے ٹیلی فون پر تصدیق کی جاتی ہے جبکہ تصدیق نہ ہونے پر اے ٹی ایم کارڈ بلاک کردیا جاتا ہے۔ترجمان نے بتایا کہ متاثرہ صارفین کی رقم تحقیقات کے بعد واپس کی جارہی ہیں۔

جعلی اے ٹی ایم کارڈ

مزید : صفحہ اول