میاں صاحب کا نظریہ اقتدار میں آؤ پیسہ بناؤ ، نواز ، زرداری پارٹنر شپ نے ملک کو مقروض کر دیا : عمران خان

میاں صاحب کا نظریہ اقتدار میں آؤ پیسہ بناؤ ، نواز ، زرداری پارٹنر شپ نے ملک ...

لیہ(مانیٹرنگ ڈیسک) پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان نے کہا ہے سابق وزیراعظم نواز شریف کہتے ہیں وہ ایک نظریہ کا نام ہے، ان کا نظریہ صرف اقتدار میں آؤ پیسہ بناؤ ، الیکشن میں دھاندلی کرو، ریٹرننگ افسر کو پیسہ کھلاؤ اور سارے ایسے وزیروں کو اپنے ساتھ ملالو جن کے اقامے ہوں۔انہوں نے نواز شریف کو مخاطب کرتے ہوئے کہا وہ اپنا موازنہ میرے ساتھ نہیں بلکہ سلطانہ ڈاکو ، فلپائن کے مارکوس یا پھر قذافی سے کریں جن کے بیٹے لیبیا سے اربوں روپے بیرون ملک لے گئے۔عمران خان نے کہا وزیر داخلہ احسن اقبال معتبر شکل بناکر جھوٹ بولتے ہیں، ان کا اقامہ سعودی عرب میں ہے۔ آج کل ساری پالیسیاں چھوٹے سے طبقے کیلئے بنتی ہیں، تاہم پاکستان میں ایسا نہیں ہوتا۔ملائیشیا اور کوریا ہم سے سیکھ کر آگے نکل گئے، پاکستان وہ ملک بنے گا جہاں لوگ باہر سے نوکریاں ڈھونڈنے آیا کریں گے۔ آج ہر پاکستانی پر ایک لاکھ 30 ہزار روپے قرض ہے، جو قومیں غلطیوں سے سیکھتی ہیں وہ پھر سے کھڑی ہوجاتی ہیں۔پاکستان میں سب سے زیادہ لوگ پیسہ مجھے دیتے ہیں، وہ ایسا اسلئے کرتے ہیں کیونکہ وہ مجھ پر اعتماد کرتے ہیں۔آصف زرداری اور نواز شریف کی پارٹنر شپ نے ملک کو مقروض کردیا ہے، اگر یہ سب ایسے ہی چلتا رہا تو پاکستان کا مستقبل برا ہوگا،حکمر ا نو ں کی ناانصافیوں سے ایک طبقہ امیرترین اور عوام مقروض ہو گئے،اگر ہماری حکومت آئی تو لاہور کے گورنر ہا ؤ س پر بلڈوزر کھڑے ہو ں گے، پیر کے روز لیہ میں جلسہ عام سے خطاب میں چیئرمین تحریک انصاف کا مزید کہنا تھا میں لیہ کے عوام کا شاندار استقبال پر شکریہ ادا کرتا ہوں، میں چار چیزیں بتاتا ہوں جس سے پاکستان شاندار ملک بن سکتا ہے اورمیں آپ کو یہ چار چیزیں کر کے دکھاؤں گا، جس سے ملک کی تقدیر بدل جائے گی، قوموں کی زندگی میں اونچ نیچ ، اچھے برے وقت آتے ہیں، جو قومیں اپنی غلطیوں سے سیکھتی ہیں وہ ترقی کرتی ہیں اور جو اصلاح نہیں کرتیں اور زمین پر انصاف نہیں کرتیں اور ظلم کے نظام کے سامنے جہاد نہیں کرتیں اللہ ان کو برباد کر دیتا ہے۔ کرپٹ مافیا نے ظلم و نا انصافی کی، عوام کو مہنگائی میں ڈبو دیا، اگر اسی طرح چلتے رہے تو مستقبل برا ہے۔ ہم ملک کو پھر عظیم بنائیں گے اور ہر پاکستانی اپنے پاسپورٹ کو فخر سے دنیا میں لے کر جائے گا، لوگ پاکستان میں نوکریاں ڈھونڈنے ، تعلیم حاصل کرنے اور سیاحت کیلئے آئیں گے، نبیؐ نے مدینہ کی ریاست میں عدل کا نظام بنایا تھا ایسا پاکستان بنانا ہے، پاکستان کو چلان کیلئے پیسہ چاہیے، اسی پاکستان سے آپ کو پیسہ اکٹھا کر کے دکھاؤں گا، ابھی ٹیکس ساڑھے تین ہزار ارب روپے ہے جبکہ پانچ ہزار ارب سے زائد ہے، میں اسی پاکستان سے آٹھ ہزار ارب روپے اکٹھا کر کے دکھاؤں گا، پاکستان دنیا میں سب سے زیادہ خیرات اور سب سے کم ٹیکس دیتی ہے کیونکہ ٹیکس لوٹا جاتا ہے، ہم عوام کا پیسہ عوام پر خرچ کریں گے، میں وعدہ کرتا ہوں آپ کا پیسہ چوری نہیں ہونے دوں گا، گورنر ہاؤس کو ہوٹل بنائیں گے، پیسہ پی ایم ہاؤس اور سرکاری عمارتوں پر خرچ نہیں کریں گے، گلیات کے ریسٹ ہاؤسز کو ہم نے عوام کیلئے کھولا جس سے ہم نے کروڑوں روپے کمائے جو عوام پر خرچ کئے، ہمارے بچوں کو خوراک نہیں ملتی اور اس غریب قوم کا پیسہ محلوں پر خرچ ہوتا ہے، نواز شریف کہتا ہے عمران خان اور نواز شریف کا کیس ایک ہے، میں کہتا ہوں آپ ملک سے پیسہ باہر اور میں باہر سے کما کر پیسہ پاکستان لایا تو ہمارا کیس ایک کیسے ہو گیا ۔فضل الرحمان بھی کرپشن میں ان کیساتھ ہے، محمود خان اچکزئی کے ضمیر کی چھوٹی قیمت لگی ہے، اس نے پشتونوں کو شرمندہ کر دیا ہے، سرمایہ کاری تب آئے گی جب کرپشن ختم ہوگی۔ سی پیک ایک بڑا موقع ہے فائدہ اٹھانے کا، اس کے بعد قرضوں کی ضرورت نہیں پڑے گی، جتنی جلدی الیکشن ہو گا جمہوریت مضبوط ہو گی، یہ چور مل کر پی ٹی آئی سے شکست کھائیں گے، نواز شریف الٹی باتیں کرتا ہے کیا فرق پڑتا ہے اگر میرے خرچے آ مد نی سے زیادہ ہیں، ہم نواز شریف سے پوچھیں گے اور اگر جواب نہ دیا تو تمہارا ٹھکانہ اڈیالہ جیل ہو گا۔

عمران خان

مزید : صفحہ اول