پولیس کیخلاف تمام الزامات بے بنیاد ہیں: ایس ایچ او تھانہ ریس کورس

پولیس کیخلاف تمام الزامات بے بنیاد ہیں: ایس ایچ او تھانہ ریس کورس

لاہور(اپنے خبر نگار سے)ایس ایچ او تھانہ ریس کورس نشاط چیمہ نے لوگوں کے مسائل کے حوالے سے بات کرتے ہوئے بتایا کہ لوگوں کا یہ کہنا کہ ہم لوگ ڈیوٹیاں وی آئی پی علاقوں میں زیادہ کرتے ہیں اور عام علاقوں میں کم کرتے ہیں جھوٹ کے علاوہ کچھ نہیں ہے جی او آر کی بات کی جائے تو یہاں موجود اکثر نفری پولیس لائن سے آئی ہے تھانے کو عملہ صرف گشت کی فرائض انجام دیتا ہے ،باقی علاقوں میں بھی وہی ڈیوٹی ہوتی ہے ،اور جہاں تھرٹ کال ہو وہاں کی سکیورٹی کی ذمہ داری زیادہ ہوتی ہے ،بڑے ہوٹلوں میں شراب بار رومز سے ہی ملتی ہے مگر وہاں سے لانے والوں کے پرمٹ موجود ہوتے ہیں بغیر پرمٹ شراب لانے والوں کو پکڑنا یا سرعام شراب پینا جرم ہے ان کے خلاف بلا امتیاز کاروائی کی جاتی ہے ،کبھی کسی بڑے ہوٹل میں شام کے بعد کوئی بار روم نہیں کھلا ہوتا صرف چند کالی بھیڑیں چھپ کر ہوٹلوں کے قریبی علاقوں میں شراب بیچتے ہیں جن کے خلاف کاروائیاں کی جاتی ہیں ،لوگوں کی درخواستوں اور ان پر کاروائیوں اور امیر اور غریب میں فرق کے حوالے سے ان کا کہنا تھا یہاں پر سب برابر ہیں کوئی فرق نہیں رکھا جاتا ،اصل حقائق کو مسخ کرنے سے حکائق ختم نہیں ہو جاتے ،جن غریبوں کا ذکر کیا جارہا ہے وہ کام پر جاتے نہیں یا بغیر بتائے ہی کام چھوڑ کر بھاگ جاتے ہیں پھر دو یا تین ماہ بعد اپنے بقایا جات وصول کرنے کے لئے پولیس کو درخواستیں دے دیتے ہیں ان کی شنوائی کرتے ہیں مگر جب ان کا ریکارڈ دیکھا جاتا ہے کہ وہ بغیر بتائے کام نہیں چھوڑ سکتے اور جھوٹے ہوتے ہیں تو پولیس کو برا بھلا کہنا شروع کر دیتے ہیں اس میں ہمارا کیا قصور ہے ہم لوگوں کی خواہشات پر جھوٹی ایف آئی آرز نہیں دے سکتے ۔پولیس کا عملہ 24گھنٹے ڈیوٹیاں کر تا ہے مال روڈ پر دھرنا ہو یا کسی اور جگہ پھر ایمرجنسی کالوں کو اٹینڈ کیا جاتا ہے ،انہوں نے اظہار خیال کرتے ہوئے کہا کہ میرے خیال میں پولیس کے لئے شفٹوں کا نظام ہونا چاہئے تاکہ ہم لوگ بھی اپنے خاندان کی خوشیوں اور غموں میں شریک ہو سکیں ۔

مزید : علاقائی