سپیشل بچوں کے سکولوں اور بسوں میں کیمرے نصب کرنے کا حکم

سپیشل بچوں کے سکولوں اور بسوں میں کیمرے نصب کرنے کا حکم

لاہور(نامہ نگار خصوصی )لاہور ہائیکورٹ نے پنجاب بھر کے سپیشل بچوں کے سکولوں اور ان کی بسوں میں سی سی ٹی وی کیمرے نصب کرنے کا حکم دے دیا ہے ،چیف جسٹس لاہور ہائی کورٹ سید منصور علی شاہ نے قراردیا ہے کہ اسپیشل بچوں پر تشدد اور انہیں ہراساں کرنا ناقابل برداشت ہے ۔چیف جسٹس نے کیس کی سماعت شر وع کی تو ڈائریکٹر اسپیشل ایجوکیشن نے جواب داخل کروایا جس میں کہاگیا ہے پنجاب میں 273گونگے بہرے بچوں کے اسکول ہیں بچوں کولانے اور لے جانے کے لئے508بسیں اور بچوں کی تعداد 754ہے جبکہ اساتذہ کی تعداد 2500ہے لیکن سٹاف اور کنڈیکٹر کی ٹریننگ نہیں ہوسکی،چیف جسٹس نے برہمی کا اظہار کرتے ہوئے ریمارکس دئیے کہ سپیشل بچوں کی تعلیم کے لئے آپ کے پاس تربیت یافتہ اسٹاف ہی موجود نہیں ،اسپیشل بچوں پر تشدد کسی صورت برداشت نہیں،ڈی پی او سیالکوٹ نے کہاکہ کنڈیکٹر مظہر کے خلاف مقدمہ درج کرکے کاروائی شروع کردی ہے، چیف جسٹس نے پنجاب بھر کے اسپیشل اسکولوں میں اور بسوں میں سی سی ٹی وی کیمرے نصب کرنے کا حکم دے دیا ہے ،عدالت نے بچوں کی سکیورٹی پر مامور تمام اہلکاروں کی ٹریننگ کا بھی حکم دیا ہے ،فاضل جج نے کیس کی مزید سماعت14دسمبر تک ملتوی کرتے ہوئے عمل درآمد رپورٹ طلب کرلی ہے۔

سپیشل بچے

مزید : علاقائی