لینڈ اونرز کی اراضی و گزار کرانے کیلئے پولیس اور ایف سی کا مشترکہ آپریشن ناکام

لینڈ اونرز کی اراضی و گزار کرانے کیلئے پولیس اور ایف سی کا مشترکہ آپریشن ...

چارسدہ (بیورورپورٹ) اجارہ کلی میں ہائی کورٹ کے حکم پر لینڈ اونرز کی آراضی واگزارکرنے کیلئے پولیس اور ایف سی کا مشترکہ اپریشن ناکام ۔مزدور کسان پارٹی کے باتور زلمے اور مزارعین نے مزاحمت کرکے د د ٹریکٹر اور لینڈ اونر کے حجرے میں آگ لگا دی ۔ آپریشن میں 1ہزار پولیس اور ایف سی اہلکاروں نے حصہ لیا۔ پاک فو ج کے دستوں کو بھی سٹینڈ بائے رکھا گیا۔ تفصیلات کے مطابق پشاور ہائی کورٹ کے احکامات کے روشنی میں چارسدہ پولیس نے اکرام اللہ جان خان اور دیگر لینڈ اونرز کی سینکڑوں ایکٹر اراضی مزارعین سے واگزار کرانے کیلئے پیر کے روز علی الصبح اپریشن شروع کیا۔ اپریشن کیلئے دیگر اضلاع سے بھی پولیس اور ایف سی نفری طلب کی گئی جبکہ آرمی کے دستوں کو سٹینڈ بائے رکھا گیا ۔ اپریشن کو کامیاب بنانے کیلئے بڑی تعداد میں بکتر بند گاڑیاں ، ایمبولینس اور فائر بریگیڈ کی گاڑیوں کو بھی علاقے پہنچایا گیا جبکہ مقامی ہسپتالوں میں ایمرجنسی نافذ کی گئی ۔ دوسری طرف مزدور کسان پارٹی کے بانی رہنماء سالار محمد شالی کے بیٹے فیاض علی کی قیادت میں باتور زلمی اور مزارعین نے علاقے کے مساجد میں اعلانات کرکے لوگوں کو مسلح نکلنے کی ہدایات کی جس پر سینکڑوں مسلح مزارعین نے گھروں سے نکل کر کھیتوں میں مورچے بنا کر وقفے وقفے سے ہوائی فائرنگ شروع کی ۔اس دوران ایم پی اے خالد خان ، تحصیل ناظم یحیٰ جان ، اے این پی کے خادم شاہ صافی اور دیگر معززین علاقہ نے کشیدگی اور خون خرابہ روکھنے کی کو شش کی مگر مزاکرات ناکام رہے جس کے بعد سیکورٹی اداروں نے ہائی کورٹ کے احکامات پر عمل در آمد کرکے اراضی واگزار کرانے کے لئے اپریشن شروع کیا گیا جس پر مزارعین مشتغل ہو گئے اور لینڈ اورنر ز کے دو ٹریکٹر جلادئیے جبکہ ساتھ ساتھ ان کے حجرے میں بھی آگ لگا دی ۔ اس حوالے سے قومی وطن پارٹی کے ایم پی اے خالد خان مہمند اور باتور زلمی کے سربراہ فیاض علی نے جائے وقوعہ پر چارسدہ جرنلسٹس سے بات چیت کر تے ہوئے ریاستی اداروں پر کھڑی تنقید کی اور کہا کہ 80سال پہلے ہمارے آباؤ اجداد نے علاقے میں بنجر زمینوں کو ہموار کرکے قابل کا شت بنایا ہے جس میں ان کے اباؤ اجداد کا خون پسینہ شامل ہے ۔ آج جب خوانین کی بنجر زمینیں سونااگل رہی ہے تو مزارعین پر ظلم و جبر کرکے ان کو بے دخل کیا جا رہا ہے ۔ انہوں نے کہاکہ کسانوں نے پہلے بھی خوانین کے ظلم و جبر کے خلاف جانوں کے نذرانے پیش کئے اور آئندہ بھی کسی قربانی سے دریغ نہیں کرینگے ۔

مزید : کراچی صفحہ اول