مظفرآباد،حکومت کی اصلاحاتی کوششوں کو ناکام بنانے کیلئے مافیا متحرک

مظفرآباد،حکومت کی اصلاحاتی کوششوں کو ناکام بنانے کیلئے مافیا متحرک

مظفرآباد(بیورورپورٹ)حکومت کی اصلاحاتی کوششوں کو ناکام بنانے کیلئے مافیا متحرک ۔پی ایس سی میں کامیاب ویٹرنری ڈاکٹرز تقرری کی راہ تکنے لگے ۔تین ماہ گزر گئے مگر تاحال ڈاکٹروں کی تقرری نہ کی جا سکی ۔بااثر گروہ مختلف حربوں کے ذریعے کامیاب امیدواروں کی تقرریوں میں رکاؤٹ ڈالنے لگے ۔ذرائع کے مطابق پی ایس سی پاس کرنے والے بعض ایسے قابل افراد بھی شامل ہیں جو پبلک سروس کمیشن پاس کرنے پر پرائیویٹ نوکریاں چھوڑ چکے ہیں مگر محکمہ کی جانب سے تاحال ان کی تقرر نامے جاری نہ کرنے پر وہ مایوس ہیں جو کہ گڈ گورننس پر ایک سوالیہ نشان ہے؟وزیراعظم راجہ فاروق حیدر خان نے ریاستی تاریخ میں پہلی بار صاف و شفاف شخصیات پر مشتمل پبلک سروس کمیشن قائم کی مگر بااثر گروہ وزیر اعظم کے اصلاحاتی اقدامات کو ناکام بنانے کیلئے سرگرم ہے جو پی ایس سی اور این ٹی ایس سمیت دیگر اقدامات کو مختلف حیلے بہانوں سے ناکام کرنے کی کوششیں کر رہا ہے ۔عوامی سماجی حلقوں نے وزیر اعظم آزادکشمیر ،چیف جسٹس عدالت العالیہ ،چےئرمین پبلک سروس کمیشن ،وزیر لائیو سٹاک ،چیف سیکرٹری اور سیکرٹری محکمہ سے مطالبہ کیا ہے کہ پبلک سروس کمیشن کی سفارشات کے عین مطابق فوری طور پر ویٹرنری ڈاکٹرز کی تقرریاں کی جائیں ۔کئی علاقوں میں وبائی امراض پھیلنے سے جانوروں کی ہلاکتیں اور ویکسینیشن و دیگر حفاظتی امور ٹھپ ہیں جبکہ پی ایس سی میں فیل ہونے والے ایڈہاک ویٹرنری آفیسران نے غیر اعلانیہ طور پر ہڑتال کا سماں پیدا کر رکھا ہے جو دفاتر کے بجائے دیگر سیاسی جماعتوں کے دفاتر اور کچہریوں میں نظرآتے ہیں ۔عوامی حلقوں نے یہ بھی مطالبہ کیا ہے کہ ایسے عناصر کے خلاف سخت کارروائی کی جائے اور انہیں فارغ کر کے پاس امیدواروں کی فوری تقرری عمل میں لائی جائے ۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر