لاجسٹکس کے شعبے میں اینگرو کا آئی ایف سی سے اشتراک

لاجسٹکس کے شعبے میں اینگرو کا آئی ایف سی سے اشتراک

کراچی(اسٹاف رپورٹر) پاکستان کی صف اول کی تسلیم کی جانے والی کمپنی اینگرو کارپوریشن نے ورلڈ بینک گروپ کی رکن انٹرنیشنل فنانس کارپوریشن(IFC) کے ساتھ ایک معاہدے پر دستخط کیے ہیں تاکہ ملک میں منضبط درجہ حرارت کے لاجسٹکس (Temperature Controlled Logistics) کی صنعت میں IFC کے انفرا وینچرز کے ساتھ کام کر نے کے مواقع پیدا کیے جا سکیں۔ یہ شراکت داری اینگرو کی لاجسٹکس کے شعبے کو سمجھنے کی کوششوں کی بدولت وجود میں آئی تاکہ وہ اشیا جنہیں temperature controlled logistics درکار ہوں جیسے زراعتی اشیا، ادویہ اور خراب ہو جانے والی کھانے کے دیگر سامان کیلئے مربوط سولیوشنز بنائے جا سکیں۔ ماہرین نے ایک محتاط اندازہ لگایا ہے کہ ٹرانسپورٹ اور تجارتی لاجسٹکس کے غیر موثر طریقہ کار کے سبب پاکستانی معیشت کو ہر سال GDP میں تقریباً چار سے چھ فیصد نقصان اٹھانا پڑتا ہے۔ اس کے علاوہ فصل کی کٹائی کے بعد کی مینجمنٹ کے ناقص طریقہ کار کے سبب ملک کو پھلوں، سبزیوں اور دودھ کی بنی ہوئی اشیا میں سے تقریباً 35 سے 40 فیصد نقصان اٹھانا پڑتا ہے۔اس موقع پر گفتگو کرتے ہوئے اینگرو کارپوریشن کے صدر غیاث خان نے کہا کہ تجارتی معیار اور ٹرانسپورٹ کے انفراسٹرکچر سمیت لاجسٹکس کے اشاروں میں پاکستان کی کارکردگی ابھرتے ہوئے اکثر ایشیائی ملکوں سے کم ہے۔ ورلڈ بینک کے حالیہ لاجسٹکس پرفارمنس انڈیکس میں 160 ملکوں کے سروے میں پاکستان کا 68واں نمبر ہے۔ اپنے اسٹریٹیجک جغرافیائی محل وقوع کے باوجود پاکستان کی مستقل درجہ بندی درمیان میں ہی چل رہی ہے جبکہ اس کے مقابلے میں بھارت کا 35واں اور چین کا 27واں نمبر ہے۔ لہٰذا یہ اس بات کی نشاندہی کرتی ہے کہ ہمارا ٹرانسپورٹ سپلائی چین سسٹم وہ اضافی سروسز فراہم نہیں کر رہا جو جدید لاجسٹکس کا طرہ امتیاز ہے جیسے کہ ملٹی ماڈل سسٹم جو ٹرانسپورٹ کے مختلف طریقوں کی مضبوطی کو ایک جگہ جمع کر کے مربوط سولیوشن کی شکل دے دیتا تھا۔ ہمارا IFC انفراوینچرز کے ساتھ معاہدہ اینگرو کی پاکستان کی ترقی کیلئے مستقل عزم اور معنی خیز مسائل کو حل کرنے کی جستجو کی عکاسی کرتا ہے جس کے ملک پر مثبت اثرات مرتب ہوں گے۔IFC کے انفرااسٹرکچر کیلئے سینئر منیجر ویبکے شلومر نے کہا کہ اینگرو کارپوریشن اور IFC ماضی میں بھی پاکستان کے متعدد اہم منصوبوں پر کامیابی سے شراکت داری کر چکے ہیں۔ ہم ایک بار پھر ایک شراکت کے ساتھ آئے ہیں جہاں ہمارا بنیادی مقصد خراب ہو جانے والی اشیا کی سپلائی چین کو بہتر بنانا ہے اور پاکستان کے لیے کھانے کے زیاں میں کمی اور پیداواری معیار کو بہتر بنانے کی راہ ہموار کرنا ہے۔IFC کے تکنیکی ماہرین کی مکمل سپورٹ کے ساتھ اینگرو کا مقصد ایک ایسا مربوط پلیٹ فارم ڈھونڈنا اور تخلیق کرنا ہے جو زراعت، ریسٹورنٹ اور ہیلتھ کیئر سمیت مختلف صنعتوں میں ویئرہاؤسنگ اور لاجسٹکس سولیوشنز کی سہولت فراہم کر سکے جس کو موثر طریقے سے کام کرنے کیلئے کاروبار پر توجہ مرکوز رکھتے ہوئے قابل اعتماد TCL سولیوشنز کی ضرورت ہے۔ مزید یہ کہ انفرااسٹرکچر ڈیولپمنٹ پراجیکٹس جیسے پاک چین اقتصادی راہداری(CPEC)، ون بیلٹ ون روڈ(OBOR) اور منسلک ملکوں سے ریل اور روڈ کے رابطوں میں پاکستان کی سرحد پار اشیا تیز تر، موثر اور قابل اعتماد طریقے سے پہنچانے کی صلاحیت اسے عالمی مارکیٹ میں مزید اہمیت فراہم کرے گی۔

مزید : کراچی صفحہ آخر