مناواں کے رہائشی 2 سگے بھائی رقم کے تنازعہ پر بیرون ملک قتل

مناواں کے رہائشی 2 سگے بھائی رقم کے تنازعہ پر بیرون ملک قتل
مناواں کے رہائشی 2 سگے بھائی رقم کے تنازعہ پر بیرون ملک قتل

  

لاہور (ویب ڈیسک) مناواں کے رہائشی 2 سگے بھائی رقم کے تنازعہ پر بیرون ملک قتل ، غیر قانونی طریقے سے پہلے خود ترکی گئے پھر محلہ دار کو بھی بلوالیا، ترکی بلوا کر طے شدہ معاوضے پر کام پر نہ لگوانے کی پاداش میں چھریوں کے وار کر کے دونوں بھائیوں کو موت کے گھاٹ اُتار دیا اور موقع سے فرار ہو گیا، لاہور میں مقتولین کے گھر میں صف ماتم بچھ گیا، حکومت سے دونوں بھائیوں کی لاشیں ملک واپش منگوانے کیلئے اپیل ۔

ڈیلی پاکستان کے یو ٹیوب چینل کو سبسکرائب کرنے کیلئے یہاں کلک کریں

ذرائع کے مطابق مناواں کے علاقے لکھوڈ یر محلہ سید والا کے رہائشی دو بھائی احسن اور محمد توصیف دوسال قبل غیر قانونی طریقے سے ترکی گئے جہاں وہ ترکی کے مختلف شہروں میں واقع فیکٹریوں میں کام کرتے رہے اسی دوران انہوں نے اپنے محلے دار بابر کو بھی غیر قانونی طریقے سے ترکی بلوالیا اور استنبول میں ایک گارمنٹس فیکٹری میں کام پر لگوادیا اور دو روز قبل احسن اور توصیف کا بابر کے ساتھ ترکی بلوانے اور کام لگوانے پر طے شدہ رقم ادا نہ کرنے پر جھگڑا ہو گیا جس پر بابر نے دونوں بھائیوں پر چھریوں سے حملہ کر دیا، خون زیادہ بہہ جانے کے باعث احسن موقع پر جا بحق ہو گیا جبکہ محمد توصیف نے ہسپتال پہنچ کر دم توڑ دیا دونوں بھائیوں کو قتل کر نے والا ملزم بابر موقع سے فرار ہو گیا دونوں بھائیوں کی موت کی اطلاع ملتے ہی ان کے گھر میں کہرام مچ گیا اور مقتولین کی ماں اپنے جواں سالہ بیٹوں کی موت کی خبر سن کر بے ہوش ہو گئی جبکہ ملزم بابر کے اہل خانہ اپنے گھروں کو تالے لگا کر نامعلوم مقام پر منتقل ہو گئے ہیں مقتولین کے والد کے مطابق اس کے بیٹے نے اپنے خرچے پر بابر کو ترکی بلوا یا تھا لیکن بابر نے ترکی میں جا کر کام کاج نہیں کیا اور الٹا ان سے خرچہ مانگتا رہا مقتولین کے والد کے مطابق ملزم نشے کا عادی بھی ہے ۔

ترکی میں قتل ہونے والے دونوں بھائیوں کے والدین نے حکومت سے اپیل کی ہے ان کے بچوں کی لاشیں جلد سے جلد پاکستان لانے کیلئے کوشش کی جائے۔

مزید : لاہور