آدمی کی محبت میں اپنی بیوی کو قتل کرنے والا شخص

آدمی کی محبت میں اپنی بیوی کو قتل کرنے والا شخص
آدمی کی محبت میں اپنی بیوی کو قتل کرنے والا شخص

  

لندن(مانیٹرنگ ڈیسک) برطانیہ میں ایک ہم جنس پرست شوہر نے مرد پارٹنر کے ساتھ زندگی گزارنے کے لیے اپنی بیوی کو قتل کرکے واردات کو ڈکیتی کا رنگ دے ڈالا لیکن پولیس نے اسے ایسی چیز سے پکڑ لیا کہ کوئی سوچ بھی نہ سکتا تھا۔ میل آن لائن کے مطابق بھارتی نژاد متیش پٹیل نامی یہ شخص اور اس کی اہلیہ جیسیکا دونوں فارماسسٹ تھے اور مل کر ایک فارمیسی چلا رہے تھے۔ جیسیکا کو گزشتہ پانچ سال سے معلوم تھا کہ اس کا شوہر ہم جنس پرست ہے اور ہم جنس پرستوں کی ایپلی کیشن ’گرنڈر‘ کے ذریعے مردوں سے ملتا اور ان کے ساتھ جنسی تعلق استوار کرتا رہتا ہے تاہم وہ خاموش تھی کہ کر بھی کیا سکتی تھی۔

اس دوران متیش پٹیل کی آسٹریلیا میں مقیم ایک بھارتی نژاد ڈاکٹر امیت پٹیل کے ساتھ بات چیت شروع ہو گئی اور متیش نے اس کے ساتھ مستقل رہنے کے لیے آسٹریلیا منتقل ہونے کا فیصلہ کر لیا۔ جیسیکا نے اپنی لائف انشورنس کروا رکھی تھی چنانچہ اس سے چھٹکارا پانے اور 20لاکھ پاﺅنڈ کی انشورنس کی رقم کے لالچ میں متیش نے جیسیکا کا گلہ گھونٹ کر اسے مار ڈالا اور پورے گھر کا سامان ادھر ادھر بکھیر ڈالا تاکہ پولیس اسے ڈکیتی سمجھے۔ تاہم جب پولیس نے متیش اور جیسیکا کے آئی فونز کا معائنہ کیا تو ان میں موجود ہیلتھ ایپلی کیشن کی وجہ سے متیش پکڑا گیا۔

رپورٹ کے مطابق یہ ایپلی کیشن صارفین کے چلنے پھرنے کی رفتار، حتیٰ کہ قدموں کی تعداد بھی نوٹ کرتی ہے، جس سے پولیس کو معلوم ہوا کہ جیسیکا کے قتل کے بعد متیش تیزی کے ساتھ گھر میں ادھر ادھر گھومتا رہا اور سیڑھیوں کے ذریعے اوپر نیچے آتا جاتا رہا۔ اس دوران جیسیکا کے آئی فون میں انسٹال کی گئی ایپلی کیشن میں کوئی سرگرمی ریکارڈ نہیں ہوئی اور وہ ساکن رہی۔ آخر میں اس میں صرف 14قدم ریکارڈ کیے گئے۔ متیش نے آخر میں جیسیکا کا فون اٹھا کر گھر کے باہر پھینک دیا تھا تاکہ پولیس سمجھے کہ ڈاکو جاتے ہوئے یہ فون باہر گرا گئے ہیں۔ جیسیکا کے فون پر یہی 14قدم ریکارڈ ہوئے تھے۔ یہ شواہد سامنے آنے پر متیش نے قتل کا اعتراف کر لیا اور گزشتہ روز جرم ثابت ہونے پر عدالت نے اسے عمر قید کی سزا سنا کر جیل بھجوا دیا ہے۔

مزید : ڈیلی بائیٹس /برطانیہ