الیکشن کمشنر، ارکان تقرری، آرمی چیف توسیع معاملات پر حکومتی نا اہلی واضح ہو چکی: مسلم لیگ (ن)

الیکشن کمشنر، ارکان تقرری، آرمی چیف توسیع معاملات پر حکومتی نا اہلی واضح ہو ...

  

اسلام آباد (این این آئی)پاکستان مسلم لیگ (ن) کی پارلیمانی پارٹی نے ملکی سیاسی، معاشی اور عوامی سطح پر مسائل پر گہری تشویش کااظہارکرتے ہوئے کہاہے کہ ملک میں بیروزگا ری، مہنگائی، غربت کا سونامی، حکمران ٹولے کے حالات میں تبدیلی لیکن عوام کی جیب پر ڈاکہ پڑچکا ہے،بجلی،گیس کی قیمتوں میں اضافہ واپس لیکر عوام کو ریلیف دیا جائے، چیف الیکشن کمشنر اور اس کے دو ارکان کی تقرری کے معاملے میں وزیراعظم کا رویہ منفی،غیرجمہوری وغیرآئینی،آرمی چیف کی مدت ملازمت،تقرری سے متعلق حکومتی نااہلی،نالائقی سپریم کورٹ میں کھل کر سامنے آچکی، قانون سازی سے متعلق قیادت کا فیصلہ ہی پارٹی کا فیصلہ ہوگا،مقبوضہ جموں وکشمیر میں مسلسل کرفیو، شہادتوں، بدترین پابندیوں اور گرفتاریوں سمیت بھارتی قابض افواج کے انسانیت سوز مظالم قابل مذمت ہیں، حکومت عالمی برادری اور اقوام متحدہ کے فورم کے ذریعے مقبوضہ کشمیر میں ہنگامی امداد کی فراہمی کیلئے اقدامات اٹھائے۔گزشتہ روز مسلم لیگ (ن) کی پارلیمانی پارٹی کا پارلیمانی لیڈر خواجہ آصف کی زیر صدارت پارلیمنٹ ہاؤس میں منعقد ہوا۔اجلاس میں سیکریٹری جنرل احسن اقبال، سابق سپیکر قومی اسمبلی سردار ایاز صادق سمیت دیگر قائدین و رہنماوں نے شرکت کی۔ اجلاس میں ملک کی مجموعی سیاسی صورتحال، عوام کو دپیش مشکلات، معاشی بدحالی سمیت دیگر قومی امو ر پر تفصیلی تبادلہ خیال اور غوروخوض کیاگیا۔ اجلاس نے مقبوضہ جموں وکشمیر میں مسلسل کرفیو، شہادتوں، بدترین پابندیوں اور گرفتاریوں سمیت بھارتی قابض افواج کے انسانیت سوز مظالم کی شدید الفاظ میں مذمت، مقبوضہ کشمیر کے عوام کی قربانیوں، جذبوں اور حوصلے کو زبردست خراج تحسین پیش کرتے ہوئے ان کیساتھ مکمل یکجہتی کامظاہرہ کیاگیاجبکہ عالمی براد ری سے مطالبہ کیاگیا کہ وہ مقبوضہ کشمیر میں جاری کرفیو، کمیونیکشن بلیک آوٹ، خوراک وادویات کی قلت کا نوٹس لے کر عملی اقدامات کرے۔حکومت عالمی برادری اور اقوام متحدہ کے فورم کے ذریعے مقبوضہ کشمیر میں ہنگامی امداد کی فراہمی کیلئے اقدامات اٹھائے۔ اجلاس نے ایل او سی پر بھارتی فائرنگ کے واقعات اور شہریوں کو نشانہ بنانے کی شدید مذمت کرتے ہوئے سرحدوں پر وطن کی حفاظت کے مقدس فرض پر مامور افسران و جوانوں کو خراج تحسین پیش کیا اور وطن عزیز کے دفاع کیلئے اپنی جانیں قربان کرنیوالے شہداء کو خراج عقیدت پیش کیا۔اجلاس میں ملک کے اندر سیاسی، معاشی اور عوامی سطح پر مسائل پر گہری تشویش کااظہاراور مطالبہ کیاگیا بجلی اور گیس کی قیمتوں میں اضافہ واپس لیاجائے اور عوام کو ریلیف دے کر ان کے مسائل میں کچھ تو کمی لائی جائے۔ اجلاس میں فیصلہ کیاگیا عوام پر مہنگائی کا عذاب مسلط کرنے پر ایوان میں شدید احتجاج کیاجائیگا۔ اجلاس نے تشویش کا ا ظہا ر کرتے ہوئے قراردیا آرمی چیف کی مدت ملازمت اور تقرری سے متعلق حکومتی نااہلی و نالائقی سپریم کورٹ میں کھل کر سامنے آچکی ہے۔ اس معاملے میں بھی حکومت نے وہی کھلنڈ راپن اور غیرسنجیدگی دکھائی جیسا چیف الیکشن کمشنر کے معاملے میں کی گئی۔ اجلاس نے متفقہ طورپر عدالت عظمی کے فیصلے کی روشنی میں آرمی چیف کی مدت ملازمت سے متعلق قانون سازی کے معاملے میں قیادت کو اختیار سونپ دیا اور واضح کیا کہ پارٹی قائدین کے فیصلے کی روشنی میں عمل کیاجائے گا۔ اجلاس نے رانا ثناء اللہ کے پروڈ کشن آرڈرز جاری نہ کرنے خواجہ سعد رفیق کے پروڈکشن آرڈرز پر عملدرآمد نہ کرنے کی شدید مذمت کرتے ہوئے کہاآمرانہ اور فسطائی سوچ رکھنے والی حکومت نے ارکان قومی اسمبلی کے استحقاق کو بھی بھیک بنادیا ہے۔ اجلاس نے نواز، شہبازشریف، شاہد خاقان عباسی، رانا ثناء اللہ، خواجہ سعد، سلمان رفیق، مفتاح اسماعیل، حمزہ شہباز سمیت دیگر تمام اسیرا ن جمہوریت کی جرات، ہمت، استقامت اور قربانی کو خراج تحسین پیش کیا۔اجلاس نے کہا وقت نے ثابت کردیا نیب نیازی گٹھ جوڑ نے مسلم لیگ (ن) کی قیادت اور رہنماوں پر جو الزامات لگائے وہ سراسر جھو ٹ ثابت ہوئے ہیں۔ اجلاس نے کاشانہ یتیم خانہ لاہور سے متعلق سامنے آنے والے افسوسناک سکینڈل کی شدید مذمت کرتے ہوئے گہری تشویش کااظہارکیا اور مطالبہ کیا کہ اس معاملے کی اعلی سطحی تحقیقات کرائی جائیں۔

مسلم لیگ ن 

مزید :

صفحہ آخر -