کرنٹ اکاؤنٹ خسارہ ختم ہو گیا تو حکومت پرانی قیمتیں بحال کرے: سراج الحق

کرنٹ اکاؤنٹ خسارہ ختم ہو گیا تو حکومت پرانی قیمتیں بحال کرے: سراج الحق

  

اسلام آباد (این این آئی)امیر جماعت اسلامی پاکستان سینیٹر سراج الحق نے کہاہے کہ اگر حکمران اپنے اس دعوے میں سچے ہیں کہ کرنٹ اکاؤنٹ خسارہ ختم ہوگیاہے تو قیمتوں میں اضافہ واپس لے کر سابق قیمتیں بحال کریں، لوگوں کو نچوڑنے کا سلسلہ بند کریں، حکومت نے لوگوں پر جو ناقابل برداشت بوجھ ڈالا ہے، اسے خود اٹھائے، حکومت آئی ایم ایف یا مالیاتی اداروں سے مرضی کی رپورٹیں بنوا رہی ہے،حکمران کہتے ہیں کہ اگر سود کو نکالا جائے تو خسارہ مزید کم ہو جائے گا تو حکمران بتائیں کہ وہ سود کو چھوڑنے کے لیے تیار ہیں۔ سود پر توسارا نظام چل رہاہے۔ ہم تو کہتے ہیں کہ سود ختم کرو گے تو بچو گے ورنہ تباہی سر پر کھڑی ہے۔ موجودہ حکومت نے پندرہ ماہ میں بیڈ گورننس کے سارے ریکارڈ توڑ دئیے ہیں۔ عوام نظام کی تبدیلی چاہتے ہیں مگر حکمران سرکاری افسروں کی اکھاڑ پچھاڑ میں لگے ہوئے ہیں اور بیوروکریسی کے چند افسروں کو ادھر ادھر کر کے سمجھتے ہیں کہ تبدیلی آگئی۔ان خیالات کااظہار انہوں نے منصورہ میں مرکزی ذمہ داران کے اجلاس اور جماعت اسلامی لاہور کے اجتماع ارکان سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ اجتماع ارکان سے امیر جماعت اسلامی لاہور ذکر اللہ مجاہد نے بھی خطاب کیا۔ سینیٹر سراج الحق نے کہاکہ درآمدات میں اس لیے کمی آئی ہے کہ مشینری باہر سے نہیں آرہی اور مشینری اس لیے نہیں آرہی کہ ملک میں ترقیاتی کام رکے ہوئے ہیں۔ اگر ترقیاتی کام ہوتے تو ملک میں روزگار کے مواقع پیدا ہو تے مگر بے روزگاری کا گراف مسلسل اوپر جارہاہے۔ لاکھوں لوگ بے روزگار ہوگئے ہیں۔ نوجوان اپنے مستقبل سے مایوس اور پریشان ہیں مگر حکمران روزانہ معاشی ترقی کے بلندو بانگ دعوے کر کے عوام کے زخموں پر نمک پاشی کر رہے ہیں۔سینیٹر سراج الحق نے کہاکہ ملک میں ظلم و جبر کا جاگیردارانہ اور سرمایہ دارانہ نظام مزید مضبوط ہواہے۔ اسٹیٹس کو کو پی ٹی آئی حکومت نے مزید طاقتور بنادیاہے۔ استحصالی اور ظالمانہ نظام میں عام آدمی کے لیے سانس لینا دشوار ہوچکاہے۔سینیٹر سراج الحق نے کہاکہ خوشحالی آنے کے حکمرانوں کے دعوؤں پر عوام اس وقت تک یقین نہیں کریں گے جب تک مہنگائی کا کوہ ہمالیہ ان کی گردنوں سے اتر نہیں جاتا۔

سراج الحق

مزید :

صفحہ آخر -