آرمی چیف سے متعلق سپریم کورٹ کا فیصلہ قانونی طور پر درست نہیں، فواد چودھری

آرمی چیف سے متعلق سپریم کورٹ کا فیصلہ قانونی طور پر درست نہیں، فواد چودھری

  

لاہور( مانیٹرنگ ڈیسک) وفاقی وزیر سائنس اینڈ ٹیکنالوجی فواد چودھری کا کہنا ہے کہ چیف جسٹس کے قانونی نقطہ نظر سے اختلاف کی کافی حد تک گنجائش ہے،آرمی چیف کی مدت ملازمت میں توسیع سے متعلق سپریم کورٹ کا فیصلہ قانونی طور پر درست نہیں،سپریم کورٹ پارلیمنٹ کو قانون سازی کی ہدایت نہیں کرسکتی۔دنیا نیوز کے پروگرام ”دنیا کامران خان کے ساتھ“میں گفتگو کرتے ہوئے فواد چودھری نے کہاہے کہ پارلیمنٹ سپریم کورٹ کے ماتحت نہیں، ایک آزاد ادارہ ہے۔  وفاقی وزیر سائنس اینڈ ٹیکنالوجی فواد چودھری نے کہا ہے کہ اپوزیشن کا الیکشن کمیشن کی تشکیل کے معاملے پر عدالت جانا بدقسمتی ہوگا،فریقین اپنی پوزیشن میں نرمی لائیں اور فیصلہ کریں۔ بدھ کو سماجی رابطے کی ویب سائٹ پر ٹویٹ کرتے ہوئے وفاقی وزیر سائنس اینڈ ٹیکنالوجی فواد چودھری نے کہا اگر سیاستدان اتنے ناپختہ ہیں کہ الیکشن کمیشن کیلئے ایک شخص پر اتفاق نہیں کر سکتے تو وہ ملک کے بڑے مسائل پر کیا اتفاق رائے پیدا کریں گے، اپوزیشن کا الیکشن کمیشن کی تشکیل کے معاملے پر عدالت جانا بدقسمتی ہوگا، فریقین اپنی پوزیشن میں نرمی لائیں اور فیصلہ کریں۔

فواد چودھری 

مزید :

صفحہ آخر -