شہباز شریف عوام کو بے وقوف بنانا چھوڑ یں واپس آکر عدالتوں کا سامنا کریں: فیاض الحسن

شہباز شریف عوام کو بے وقوف بنانا چھوڑ یں واپس آکر عدالتوں کا سامنا کریں: فیاض ...

  

لاہور (فلم رپورٹر،آن لائن) شہباز شریف اپنی بے گناہی کے بڑے بڑے دعوے ایسے وقت پہ کر رہے ہیں جب پاکستان کے قانونی اداروں کے ہاتھوں گرفتار ان کے فرنٹ مین شہباز شریف اور حمزہ شہباز کے کہنے پہ اربوں کھربوں کی کرپشن کا اعتراف کر چکے ہیں۔ یہ وہی شہباز شریف ہیں جنہوں نے پرویز الٰہی سے 100 ارب منافع والا صوبہ پنجاب 1200 ارب کا مقروض کر کے سردار عثمان بزدار کے حوالے کیا۔ یہ وہی شہباز شریف ہیں جنہوں نے اپنی بنائی 56 کمپنیوں کے ذریعے لوٹ مار کر کے انہیں خسارے میں ہمارے حوالے کیا۔ ان خیالات کا اظہار صوبائی وزیر برائے اطلاعات فیاض الحسن چوہان نے لندن میں شہباز شریف کی نیوز کانفرنس کے رد عمل میں کیا۔ انہوں نے کہا کہ شہباز شریف نے ماڈل ٹاؤن کی صورت میں پنجاب میں قتل و غارت کا بازار گرم کیے رکھا اور پنجاب کی پولیس، واسا، پٹوار سمیت تمام اداروں کا سوا ستیاناس پھیرے رکھا۔ فیاض الحسن چوہان نے مزید کہا کہ آج شہباز شریف کس منہ سے اپنی بے گناہی کی بات کر رہے ہیں۔ شہباز شریف نے اس برطانوی صحافی کے خلاف دائر کیے گئے ہتک عزت کیس کو بھی فالو نہیں کیا جس نے انہیں کرپٹ کہا تھا۔ فیاض الحسن چوہان نے کہا کہ شہباز شریف صاحب کے پیٹ میں مروڑ کرپشن کی گاجریں کھانے سے اٹھ رہا ہے اور نیب کا ڈاکٹر ہی اب ان مروڑوں کا علاج کرے گا۔ شہباز شریف کے اثاثے پراسکیوشن کے پورے عمل کے بعد منجمد ہو ئے ہیں۔ انہوں نے شہباز شریف کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ وہ عوام کو بے وقوف بنانا چھوڑ دیں اور واپس آ کر عدالتوں کا سامنا کریں۔قبل ازیں شہباز شریف، نواز شریف کی پلیٹیں ٹھیک کروانے چلے گئے، اپنے چمچے اور کڑچھے پیچھے چھوڑ گئے جو مسلسل کھڑک رہے ہیں۔ شریف برادران کو سکیورٹی رِسک اور کرپشن کے بے تاج بادشاہ کہنے والے اویس لغاری اور عظمیٰ بخاری آج کس منہ سے آلِ شریف کی نمائندگی اور تعریفیں کر رہے ہیں۔ ان خیالات کا اظہار صوبائی وزیر اطلاعات فیاض الحسن چوہان نے اویس لغاری اور عظمیٰ بخاری کی جانب سے کی گئی پریس کانفرنس کے جواب میں کیا۔ صوبائی وزیر نے کہا کہ ن لیگ کی آج کی پریس کانفرنس کھسیانی بلی کھمبا نوچے کی اعلیٰ و ارفع مثال ہے۔ لندن کے 1-ہائیڈ پارک کیس میں 38 ارب پاکستان کو دینے کے فیصلے کے حوالے سے بات کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ اس فیصلے کے بعد شہباز شریف اور حمزہ شہباز کو چْلو بھر پانی میں ڈوب مرنا چاہئیے۔ انہوں نے کہا کہ آل پاکستان لوٹ مار ایسوسی وزیرِ اعظم عمران خان اور وزیرِ اعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار پر تنقید کی بجائے اپنی کرپشن کی کھائی ہوئی گاجروں کے مروڑوں کے تدارک کا بندوبست کریں۔

فیاض الحسن

مزید :

صفحہ اول -