نشانہ بازی، سپاہیانہ مہارتوں میں بنیادی حیثیت رکھتی ہے: عارف علوی 

  نشانہ بازی، سپاہیانہ مہارتوں میں بنیادی حیثیت رکھتی ہے: عارف علوی 

  

راولپنڈی/جہلم (این این آئی) صدر مملکت عار ف علوی نے کہا ہے کہ نشانہ بازی سپاہیانہ مہارتوں میں بنیادی حیثیت رکھتی ہے، قومی مقاصد کی تکمیل شہدا کو خراجِ عقیدت پیش کرنے کا بہترین طریقہ ہے۔صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی نے جہلم کے قریب فائرنگ رینج کا دورہ کیا اور 39 ویں میگا شوٹنگ مقابلوں کی اختتامی تقریب میں بطور مہمان خصوصی شرکت کی۔فائرنگ رینج پہنچنے پر آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے صدر مملکت کا استقبال کیا۔آئی ایس پی آر کے مطابق مقابلوں میں تینوں مسلح افواج اور دیگر اداروں کے 953 نشانہ بازوں نے شرکت کی۔ نشانہ بازی کے مقابلوں میں مختلف جنگی کارروائیوں میں زخمی ہونے افسروں اور جوانوں نے بھی حصہ لیا۔آئی ایس پی آر نے بتایا کہ نشانہ بازی کے مقابلے پاک فوج نے جیت لئے، منگلا کور کے سپاہی محمد ندیم نے ماسٹر آف آرمز جبکہ لیفٹیننٹ کرنل ریٹائرڈ ادریس رشید نے پریزیڈنٹ کپ ٹرافی حاصل کی۔ پاک بحریہ نے پرائم منسٹر سکیل ایٹ آرمز کے مقابلے جیتے۔صدر مملکت نے نشانہ بازوں کی شاندار مہارت کو خراج تحسین پیش کرتے ہوئے کہا کہ نشانہ بازی سپاہیوں کی بنیادی مہارت ہے۔ انہوں نے کہا کہ قومی مقاصد کی تکمیل شہدا کو خراج عقیدت پیش کرنے کا بہترین طریقہ ہے۔صدر مملکت اور آرمی چیف نے بھی نشانہ بازی کے مقابلوں میں حصہ لیا۔ دریں اثناصدرنے معیارات اور پالیسی کے حوالے سے مسائل اور چیلنجز سے متعلق کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا ہے کہ جدید ٹیکنالوجی کو مدنظر رکھتے ہوئے اساتذہ کی استعداد کار میں اضافہ کیا جانا چاہیے،جامعات مارکیٹ اور صنعتوں کے تقاضے کو مدنظر رکھتے ہوئے نوجوانوں کو تعلیم دیں، تعلیم کے ساتھ ساتھ معیارات پر توجہ دینے کی ضرورت ہے، معیارات کے حصول اور کامیابی کے لئے مستقل مزاجی اور جذبہ سے کام کرنا ہوگا، حکومت نے بیوروکریسی کے بہتر معیار کے جائزہ کے لئے ڈاکٹر عشرت حسین کی سربراہی میں کمیٹی تشکیل دی ہے۔

عار ف علوی 

مزید :

صفحہ اول -