5 سے16 سال کے بچوں کی تعلیم ریاست کی ذمہ داری،شفقت محمود

 5 سے16 سال کے بچوں کی تعلیم ریاست کی ذمہ داری،شفقت محمود

  

اسلام آباد (این این آئی)وفاقی وزیر تعلیم و تربیت شفقت محمود نے کہا ہے کہ ہمارے نظام تعلیم میں نا انصافی ہے، وزیر اعظم تعلیمی نظام میں بہتری کیلئے کوشاں ہیں، مدرارس کے بچے قومی نصاب کے تحت آئندہ چار سالوں میں امتحانات کا حصہ ہونگے، مدارس کے بچوں کو آن بورڈ کرنا ایک بڑی کامیابی ہوگی جبکہ تعلیم سے متعلق جتنے بھی چیلنجز ہیں انکا حل نکالنا ہو گا۔وہ انسٹی ٹیوٹ آف سوشل اینڈ پالیسی سائنسز  آئی سیپس کے زیر اہتمام پاکستان کو درپیش تعلیمی چیلنجز سے نمٹنے اورقومی سطح پر اتفاق راے پیدا کرنے کیلئے منعقدہ قومی کانفرنس کے اختتامی سیشن سے خطاب کررہے تھے جس میں صوبائی وزراء تعلیم،ارکان پارلیمنٹ، ایگزیکٹو ڈائریکٹر ڈاکٹر سلمان ہمایوں سمیت تعلیمی ماہرین نے شرکت کی۔ اختتامی سیشن سے خطاب کرتے ہوئے شفقت محمود نے کہاکہ 18ویں آئینی ترمیم کے بعد بہت سی تبدیلیاں آئی ہیں، پانچ سال سے 16سال کے بچوں کی تعلیم ریاست کی ذمہ داری ہے تاہم وفاق کسی کی حدود اور اختیارات میں مداخلت نہیں کرنا چاہتا۔ انہوں نے کہاکہ جتنے بھی قومی چیلنجز تعلیم سے متعلق ہیں انہیں حل کرنا ہے، ہمارے نظام تعلیم میں نا انصافی ہے اور ملک میں تین طرح کے نظام تعلیم چل رہے ہیں۔ انہوں نے کہاکہ ہم نے لٹریسی کے معاملات کا جائزہ لینا ہے، نظام تعلیم سے متعلق درپیش چیلنجز کو قومی پالیسی میں شامل کیا ہے۔  مدرارس کے بچے قومی نصاب کے تحت آئندہ چار سالوں میں امتحانات کا حصہ بنے گے، میٹرک، ایف اے کے امتحانات میں مدارس کے بچے حصہ لینگے، مدارس کے بچوں کو آن بورڈ کرنا ایک بڑی کامیابی ہوگی۔

شفقت محمود

مزید :

صفحہ اول -