اطلاعات تک رسائی کا قانون خیبرپختونخوا حکومت کا بڑا کارنامہ ہے:محمد اعظم

اطلاعات تک رسائی کا قانون خیبرپختونخوا حکومت کا بڑا کارنامہ ہے:محمد اعظم

  

پشاور (سٹی رپورٹر)چیف انفارمیشن کمشنر  محمد اعظم نے کہا ہے اطلاعات تک رسائی کا قانون خیبر پختونخو احکومت کا بڑا کارنامہ ہے، اس قانون کی بدولت کرپشن کے روک تھام میں نمایاں کامیابی ہوئی ہے، قانون کے زریعے معلومات تک ہر شخص کی رسائی کو ممکن بنایا گیا ہے، پشاور پریس کلب میں انفارمیشن کمشنر  خیبر پختونخوا ریاض داودزئی کے ہمراہ پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ وفاقی سطح پر اس قانون کو 2017 میں نافذ کیا گیا تھا، اس قانون کے زریعے بغیر کسی فیس کے معلومات فراہم کئے جاتے ہیں، انہوں نے کہا کہ آر ٹی آئی کے حوالے سے ورلڈ رنکنگ میں 132ممالک میں پاکستان کا 32 ویں نمبر ہے۔محمد اعظم نے کہا کہ آر ٹی آئی قانون کے حوالے سے عوام میں شعور پیدا کرنے کی ضرورت ہے۔لوگوں کو معلوم ہونا چاہئے کہ اس قانون کے تحت ان کو کیا کیا حقوق دیئے گئے ہیں۔انہوں نے مزید کہا کہ حکومت سے متعلق معلومات کے حصول میں کچھ رکاوٹیں حائل ہیں۔قانون میں اس بات کا تعین کیا جاچکا ہے کہ کون کونسے معلومات دینی چاہیئے اور کون کونسے نہیں دینی چاہئے۔انفارمیشن کمشن زاہد عبدو اللہ نے کہا کہ آر ٹی آئی قانون صحافیوں کے لئے بہت مددگار ثابت ہوسکتا ہے۔انہوں نے کہا اگر کسی کو درخواست دینے کے باوجود 10دن تک معلومات فراہم نہ ہوسکے تو وہ شخص کمیشن کے پاس آسکتا ہے۔کمیشن  درخواست پر عملدرآمد یقینی بنانے کے لئے کام کرتا ہے۔اس موقع پر انفارمیشن کمشنر خیبر پختونخوا ریاض داودزئی نے بھی خطاب کیا۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -