منشیات فروشوں اور سود خوروں کیخلاف گھیرا تنگ کیا گیا،شیر اکبر خان

منشیات فروشوں اور سود خوروں کیخلاف گھیرا تنگ کیا گیا،شیر اکبر خان

  

چارسدہ (بیورورپورٹ) ڈی آئی جی شیر اکبر خان نے کہا ہے کہ منشیات فروشوں اور سو د خوروں کے خلاف گھیرا تنگ کیا گیا ہے۔ سپیشل پولیس فورس کے مستقلی کے حوالے سے اضلاع کی سطح پر سکروٹنی جاری ہے اور بہت جلد اس حوالے سے نوٹیفکیشن جاری کر دیا جائے گا۔عوام کے تعاون کے بغیر جرائم کی بیخ کنی ممکن نہیں۔ وہ چارسدہ میں پولیس دربار اور بعد ازاں میڈیا سے بات چیت کر رہے تھے۔ اس موقع پر ڈی پی او چارسدہ عرفان اللہ خان مروت،ایس پی انوسٹی گیشن افتخار شاہ خان،تمام سرکل ڈی ایس پیز اور مختلف تھانوں کے ایس ایچ اوز سمیت پولیس جوانوں کی کثیر تعداد موجود تھی۔پولیس دربار میں جوانوں نے ڈی آئی جی کو اپنے مسائل اور مشکلا ت سے آگاہ کیا جس کے حوالے سے ڈ ی آئی جی نے بیشتر مسائل کے حوا لے سے موقع پر احکامات جار ی کر دیئے۔ اس سے پہلے ڈی آئی جی شیر اکبر خان کو چارسدہ آمد پر پولیس کے چاق و چوبند دستے نے سلامی پیش کی۔ڈی آئی جی نے شہداء کے یادگار پر پھول چڑھائے۔ بعدازاں میڈیا نمائندوں کے سوالوں کے جواب میں ڈی آئی جی شیر اکبر خان نے کہا کہ آئس ڈرگ اور دیگر منشیات کے خرید و فروخت کے حوالے سے نئی قانون سازی کے بعد پولیس کے پاس کافی سارے احتیارات آچکے ہیں اور اس حوالے سے مردان ریجن سمیت پورے صوبے میں منشیات فروشوں اور سو د خوروں کے خلاف گھیرا تنگ کیا گیا ہے جبکہ اب تک سینکڑوں منشیات فروشوں اور سود خوروں کو نئے قانون کے تحت جیل بھیج دیا گیا ہے۔سپیشل پولیس فورس کے جوانوں کی مستقلی کے حوالے سے ڈی آئی جی نے واضح کیا کہ اس حوالے سے صوبے کے تمام اضلاع کے سطح پر سکروٹنی کمیٹیاں اپنا کام جا ری رکھے ہوئی ہیں اور انشاء اللہ اس حوالے سے بہت جلد نوٹیفکیشن جاری کر دیا جائے گا۔انہو ں نے مزید کہا کہ عوام کے تعاون کے بغیر جرائم کی بیخ کنی ممکن نہیں اس لئے علاقے کو امن کا گہوارہ بنانے کے لئے عوام پولیس کے ساتھ تعاون کو یقینی بنائیں۔انہو ں نے مزید کہا کہ عوام کی جان و مال کی ذمہ داری پولیس کی اولین ذمہ داری ہے۔ خیبر پختون خوا پولیس نے دہشت گردی کے خلاف جنگ میں لا زوال قربانیوں کی تاریخ رقم کی ہے جس کو رہتی دنیا تک یاد رکھا جائے گا۔انہوں نے پولیس شہداء کو خراج تحسین پیش کرتے ہوئے کہا کہ ان کی بدولت آج خطے میں امن قائم ہے۔محکمہ پولیس اپنے شہداء کی قربانیوں کو کبھی نہیں بھول سکتی اور شہداء کے خاندانوں کے شانہ بشانہ کھڑی رہی گی۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -