بیٹوں کے قتل کی ایف ائی ار لیویز خاصہ دار فورس کے اہلکاروں کیخلاف درج نہ ہو سکی،عبدالقیوم

بیٹوں کے قتل کی ایف ائی ار لیویز خاصہ دار فورس کے اہلکاروں کیخلاف درج نہ ہو ...

  

پشاور(سٹی رپورٹر)2001میں تحصیل باڑہ کے رہائشی نوجوان طالب علم بھائیوں کا نا معلوم خاصہ دار فورس کے اہلکاروں کے ہاتھوں قتل کا معمہ 18سال بعد بھی حل نہ ہوسکا مقتول کا بزرگ والد بیٹوں کے قاتلوں کی گرفتاری کیلئے در در ٹھوکریں کھانے پر مجبورہے انصاف دلانے والا کوئی نہیں بزرگ شہری اپنے بیٹوں کے قاتلوں کی عدم گرفتار ی کی فریاد لیکر پشاور پریس کلب پہنچ گیا جہاں بزرگ شہری عبدالقیوم نے کو اپنی فریاد سناتے ہوئے کہا کہ بیٹوں کے قتل کی ایف ائی ار لیویز خاصہ دار فورس کے اہلکاروں کے خلاف درج نہ ہو سکی جبکہ سابقہ اسسٹنٹ پولیٹکل ایجنٹ باڑہ جمال الدین،تحصیلدار غلام حبیب باڑہ،خاصہ دار فورس کے کے جائے وقوعہ پر موجود دیگر اراکین کے خلاف بھی ائی ایف ائی درج نہ ہوسکی۔انہوں نے کہا کہ کمشنر ایف سی ار نے 2005میں انکوئری کے احکامات دیے تھے جس پر اج تک کوئی کارروائی نہ ہوسکی اسکے علاوہ عدالتی عالیہ سے رجوع کیا مگر کوئی شنوائی نہ ہوئی۔انہوں نے مزید کہا کہ جرگہ تشکیل دیا گیا مگر جرگی اراکین نے مجھ سے دستخظ لیے تاہم ایک سال گزرنے کے باوجود جرگہ کچھ نہ کر سکی۔انہوں نے حکومت،چیف جسٹس پشاور ہائی کورٹ اور دیگر اعلیٰ حکام سے مطالبہ کیا ہے کہ سابقہ اسسٹنٹ پولیٹکل ایجنٹ باڑہ جمال الدین،تحصیلدار غلام حبیب باڑہ،خاصہ دار فورس کے کے جائے وقوعہ پر موجود دیگر اراکین کے خلاف ائی ایف ائی درج کی جائے اور مجھے انصاف دیا جائے

مزید :

پشاورصفحہ آخر -